ـ114 سال میں پہلی بار ٹائمز اسکوائر عوام کے لیے بند

217
واشنگٹن: کورونا وائرس کی نئی قسم کے کیسز سامنے آنے کے بعد نئے سال کا جشن منانے سے عوام کو روکنے کے لیے ٹائمز اسکوائر کو بیریئر لگا کر بند کیا جا رہا ہے

واشنگٹن (انٹرنیشنل ڈیسک) امریکا میں کورونا وائرس سے ریکارڈ 3900 اموات سامنے آئی ہیں، جس کے بعد حکام کا کہنا ہے کہ مجموعی ہلاکتوں کی تعداد ساڑھے 3 لاکھ سے بھی زیادہ ہوگئی۔ امریکا دنیا بھر میں کورونا سے متاثرہ سب سے بڑا ملک ہے، جہاں کیسز کی تعداد 2 کروڑ سے تجاوز کرگئی ہے جب کہ گزشتہ روز امریکی ریاست کولوراڈو میں کورونا کی نئی قسم کے کیس کی بھی تصدیق ہوچکی ہے۔ خبر رساں اداروں کے مطابق وائرس کے تیزی سے پھیلاؤ کے باعث نیویارک کے ٹائمز اسکوائرپر نئے سال کا جشن منانے کے لیے عوام کو آنے سے روکنے کے لیے 114 سال میں پہلی بار عوام کے آنے پرپابندی عائد کردی گئی ہے۔ دوسری جانب برطانیہ میں کورونا سے 981 اموات ہوئیں اور 50 ہزار نئے کیسز سامنے آئے جن میں نوجوانوں کی بڑی تعداد بھی وباکا شکار ہے۔ اپریل کے بعد سب سے زیادہ ہلاکتوں کے بعد برطانیہ میں مزید 2 کروڑ افراد پر چوتھے درجے کی پابندیاں نافذ کردی گئی ہیں، جس کے باعث اسکول تاخیر سے کھلیں گے۔ علاوہ ازیں بھارتی دارالحکومت نئی دہلی اور ممبئی میں سال نو کا آغاز کرفیو سے ہوگا۔ کورونا وائرس کی نئی قسم کے کیسز سامنے آنے کے بعد نئی دہلی اور ممبئی میں سال نو کے آغاز پر کرفیو نافذ کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے جب کہ دیگر ریاستوں میں بھی سخت پابندیاں لگائی گئی ہیں۔