ڈیٹنگ ایپ نے مسلمانوں کا ڈیٹا امریکی فوج کو بیچ دیا

766
فوٹو: مڈل ایسٹ آئی

امریکی فوج کی جانب سے معروف نماز اور ڈیٹنگ ایپ کا استعمال کرنے والے دنیا بھر کے لاکھوں مسلمانوں کا ڈیٹا خریدنے کا انکشاف ہوا ہے۔

پیر کو شائع ہونے والے آن لائن میگزین مدر بورڈ نے اپنی تحقیقاتی رپورٹ میں انکشاف کیا ہے کہ امریکی اسپیشل آپریشنز کمانڈ متعدد کمپنیوں سے مقامی ڈیٹا حاصل کررہی ہیں۔

امریکی فوج کا ہدف مسلمانوں کی قرآن اور نماز ایپ تھی جو مسلم پرو کے نام سے جانی جاتی ہےجسے دنیا بھر میں 10کروڑ سے زائد بار ڈاؤن لوڈ کیا گیاہے جبکہ دوسری ایک مسلمان ڈیٹنگ ایپ بھی شامل تھی۔

عوامی ریکارڈز، ڈویلپرز کےساتھ انٹرویوز اور تکنیکی تجزیے کی بنیاد پر مدر بورڈ انوسٹی گیشن میں بتایا گیا ہے کہ جب کچھ لوگ براؤزنگ سیشنوں میں اپنی پروفائل ڈالتے یا اس کی ادائیگی کرتے ہیں تو کچھ کمپنیاں ایپ لوکیشن کا ڈیٹا حاصل کرتی ہیں۔

دوسری جانب امریکی فوج نے اس خبر کی تصدیق کردی ہے۔

ایکس موڈ نامی کمپنی کے محل وقوع کے اعداد و شمار کو فروخت کرنے میں شامل ایک کمپنی نے کہا ہے کہ وہ ہر ماہ ریاستہائے متحدہ میں 25 ملین آلات اور 40 ملین دوسری جگہوں پر نظر رکھتا ہے۔

Report finds US military buying location data off Muslim prayer apps | Y  This News

مدر بورڈ نے مسلم مینگل ڈیٹنگ ایپ کو ایک اینڈرائڈ فون پر انسٹال کیا اور دیکھا کہ اس نے بار بار وائی فائی نیٹ ورک کے نام کے ساتھ ساتھ جغرافیائی محل وقوع کو ایکس موڈ پر بھیجا۔ تحقیقات میں پتہ چلا ہے کہ مقام کے اعداد و شمار کو جاری کرنے والی دوسری ایپس میں ایکوپیڈو نامی ایک قدم کاؤنٹر ایپ، موسم ایپ گلوبل طوفان اور کریگ لسٹ برائے سی پیلس شامل ہیں۔

امریکی سینیٹررون وائیڈن نے مدر بورڈ کو بتایا کہ ایکس موڈ نے دوسرے “امریکی فوجی صارفین” کو جمع کردہ ڈیٹا بیچنے کا بھی اعتراف کیا ہے۔