وفاق نے کراچی کیلیے لفاظی کے سوا کچھ نہیں کیا،شہباز شریف

87

لاہور(خبر ایجنسیاں)وفاق نے کراچی کے لیے لفاظی کے سوا کچھ نہیں کیا۔شہباز شریف۔مسلم لیگ ن کے صدر اورقائد حزب اختلاف شہباز شریف کاکہنا ہے کہ اپوزیشن اور مودی کو ایک پیج پر وہ شخص کہہ رہاہے کہ جوکہتا تھاکہ مودی کوفون کررہاہوں لیکن وہ فون نہیں اٹھارہا۔مودی جیت گیا تو مسئلہ کشمیرحل ہوجائیگا۔ کراچی سے لاہور پہنچنے پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے شہباز شریف کا کہنا تھا کہ وزیراعظم نے فنانشل ایکشن ٹاسک فورس (ایف اے ٹی ایف) سے متعلق الزام لگا کر زیادتی کی۔اپوزیشن نے ایوان میں مقبوضہ کشمیر کی صورت حال پر سب سے زیادہ شورمچایا تھا۔شہباز شریف کاکہنا تھاوزیراعظم کاکام تھاکہ وہ اس وقت کراچی میں بیٹھتے اور سندھ حکومت کیساتھ امدادی سرگرمیوں کی نگرانی کرتے، سندھ حکومت اپنے طورپرکوشش کررہی ہے لیکن وفاق کی جانب سے صرف لفاظی کی گئی،ہم کل کراچی میں سارا دن گھومتے رہے لیکن وفاقی حکومت کہیں نظر نہیں آئی۔اپوزیشن لیڈر کا کہنا تھا کہ ہم مہنگائی اور عوامی مسائل کی بات کرتے ہیں تو ہمیں کہا جاتا ہے کہ ہم این آر او مانگتے ہیں، اگر نواز شریف وزیراعظم ہوتے تو وہ کراچی میں ڈیرے لگائے ہوتے لیکن عمران خان ابھی تک کراچی نہیں گئے۔ شہباز شریف کا کہنا ہے کہ وزیر اعظم عمران خان کو ان کے باہر نکلنے پر اعتراض ہے اور وہ سوچ رہے ہیں کہ مجھے دوبارہ کیسے جیل میں ڈالیں۔انہوں نے کہا کہ عمران خان نیازی اپوزیشن کے ساتھ انتقام کے بجائے معیشت پر توجہ دیتے تو صورتحال مختلف ہوتی، ہمیں دیوار سے لگا کر جھوٹے الزامات کی بنیاد پر پابند سلاسل کیا گیا اور ظلم کا بازار گرم کیا گیا، جبکہ حمزہ شہباز کو اس لیے گرفتار کرکے جیل میں رکھا ہوا ہے کیونکہ وہ ان کا بیٹا ہے۔انہوں نے کہا کہ عمران خان بغض سے بھرے اور کینہ پرور ہیں اور ان میں انتقام کی آگ سلگ رہی ہے۔نواز شریف کے حوالے سے شہباز شریف نے کہا کہ سابق وزیر اعظم کے معاملے میں عدالت کا حکم سر آنکھوں پر لیکن ہم عدالتوں سے بھاگے کب ہیں، نواز شریف کو جب ڈاکٹر اجازت دیں گے تو وہ عدالت کے سامنے پیش ہوں گے