“فلسطینی زمین پر اسرائیلی قبضے کیخلاف خاموشی غداری ہے”

391

ترک انٹرنیشنل یونین فار مسلم اسکالرز نے کہا ہے کہ”اسرائیل کی جانب سے فلسطینی سرزمین پر قبضے کیخلاف مسلم دنیا کی خاموشی غداری کے زمرے میں آتی ہے”۔

 ترک انٹرنیشنل یونین فار مسلم اسکالرز نے اپنے بیان میں کہا کہ اگر اسرائیل فلسطین کی زمین پر قبضہ کرنے میں کامیاب ہو جاتا ہے تو اقوام متحدہ اور عالمی برادری سے مسلم دنیا کا اعتماد ختم ہوجائے گا۔ اسرائیلی منصوبے کی کامیابی دراصل دنیا میں افراتفری پھیل جائے گی اور مسلم دنیا کے غصے کو ٹھنڈا کرنا ناممکن ہوگا۔

یونین مزید کہا کہ مسلم ممالک کو فلسطین کے ساتھ یکجہتی کا اظہار کرنا چاہیئے اور اسرائیل کے ساتھ کیے گئے تمام معاہدے فوری طور پرختم کرنے چاہیں۔

Annexation of the West Bank Would Enshrine Israeli Rights Over ...

 یونین نے اسرائیل کے ساتھ سخت رویہ اپنانے پر زور دیتے ہوئے کہا کہ اسرائیل کے فلسطین کی زمین پر غاصبانہ قبضے اور عالمی قوانین کی کھلم کھلا خلاف ورزی پر فوری ایکشن لیا جائے۔ فلسطین کی ایک انچ زمین پر اسرائیلی قبضہ عرب اور مسلم نوجوانوں میں غم و غصے کا باعث بنے گا اور اس غصے کو ٹھنڈا کرنا کسی کے بس میں نہیں رہے گا۔ اسرائیل کا فلسطین پر قبضہ دراصل اسلام پر حملہ تصور ہوگا۔

قبل ازیں اسرائیلی وزیراعظم نتن یاہو نے یکم جولائی کو غزہ کے مغربی کنارے کے 30 فیصد علاقے پر قبضہ کرکے یہاں یہودی بستیوں کے قیام کا اعلان کیا تھا تاہم اسرائیل نے فی الوقت  اس منصوبے کو کچھ عرصے کیلئے ملتوی کردیا ہے۔

Israel's annexation of the West Bank will be yet another tragedy ...

واضح رہے کہ یورپ اور مسلم دنیا اسرائیل کے اس غاصبانہ قبضے کے خلاف ہے لیکن امریکا اسرائیل کی حمایت کررہا ہے۔

دوسری جانب عالمی برادری  سمیت یورپی یونین نے فلسطین کے مغربی کنارے پر یہودی بستیوں کے قیام کو غیر قانونی اقدام اور عالمی قوانین کی کھلم کھلا خلاف ورزی قرار دی ہے۔