مدینہ کالونی بلدیہ میں شہریوں سے موٹر سائیکل کے کاغذات نہ ہونے کے 200روپے ، ماوے کے500اور پولیس پیٹرول کے نام پر رقم بٹورنے کا سلسہ جاری،

247

کراچی( اسٹاف رپورٹر) پولیس اہلکار شہریوں کے لیے درد سر بن گیا۔ شہریوں سے موٹر سائیکل کے کاغذات نہ ہونے کے 200روپے ، ماوے کے500اور پولیس پیٹرول کے نام پر رقم بٹورنے کا سلسہ جاری ہے ۔

ذرائع کے مطابق مدینہ کالونی تھانے کی حدود 7نمبر چوک پر صبح کے وقت میں اسنیپ چیکنگ کے بہانے ڈیوٹی پر جانے والے افرد کو بلا وجہ روک کر پیسے بٹور نے کا عمل تیزی سے جاری رکھا ہوا ہے ، پولیس اہلکارموٹر سائیکل سوار افراد کو بلا وجہ روکتاہے اور اتفاق سے کسی کے پاس کاغذات نہ ہوں تو اس سے 200اور جسکے پاس سے ماوا نکل آئے اس سے 500 روپے لے رہا ہے،

علاقہ مکینوں کا کہنا ہے اگر موٹر سائیکل کے کاغذت مکمل ہونے کی صورت میں بھی شہری کو جانے نہیں دیا جاتا اور سر کاری گاڑی کے پیٹرول کے نام پر پیسے وصول کئے جاتے ہیں ،شہریوں سے کہا جاتا ہے کہ ہمیں پیٹرول اپنی جیب سے ڈلوانا پڑتا ہے ہمیں گورنمنٹ پیٹرول کی رقم نہیں دیتی ہے اہل محلہ کا مزید کہنا تھا کہ پولیس اہلکار کا دعوی ٰ ہے کہ ایس ایچ اور مدینہ کالونی کی بیٹ کے حوالے سے بس اسٹاپ ،مارکیٹس ، ٹھیلے پتھارے ، گھریلوصنعت ، ودیگر جرائم پیشہ کاروبار کی ساری سیٹنگ میں نے کروائی ہے،

علاقہ مکین نے آئی جی سندھ ایس ایس پی ویسٹ اور ایس پی بلدیہ شہلا قریشی سے اپیل کی ہے انٹیلی جنس رپورٹ کو بروکار لاتے ہوئے پولیس میں موجود کالی بھڑوں کے خلاف فوری کارروائی کی جا ئے اور عوام کو بد دیانت پولیس اہلکاروں اور افسران سے تحفظ فراہم کیا جائے َ۔