آگ سے متاثرہ جنگلات میں  جانوروں کیلئے خوراک مہیا کرنے کا سلسلہ شروع

692

سڈنی: آسٹریلیا کے جنگلات میں لگی آگ سے متاثرہ علاقوں میں جانوروں کیلئے ہیلی کاپٹر کی مدد سے خوراک مہیا کرنے کا سلسلہ شروع کردیا ۔

تفصیلات کے مطابق آسٹریلیا کے جنگلات میں گزشتہ سال دسمبرکے وسط میں لگی آگ کی وجہ سے لاکھوں ایکڑ پرپھیلے جنگلات جل کر خاکستر ہوگئے ہیں جبکہ  آگ کی وجہ سے جہاں درجنوں انسانی جانوں کا ضیاع ہوا وہیں 1ارب جانور بھی ہلاک ہوئے۔

دوسری جانب زندہ بچ جانے والےجانوروں کو شدید قلت کا سامنا ہے اور اس  کام کو انجام دینے کیلئےہیلی کاپٹر کے ساتھ ہوائی جہاز کا سہارا بھی لیا جارہا ہے۔

واضح رہےکہ انتظامیہ نے جن علاقوں میں کیپرٹری اور وولگن ویلیز، ینگو نیشنل پارک، دی کینگرو ویلی، جینولن، اوکسلے وائلڈ ریورز اورکرمبنڈی نیشنل پارک میں یہ آپریشنز کیے گئے ہیں ۔اس دوران ہوائی جہاز اور ہیلی کاپٹر کی مدد سے شکر قندی اور گاجر سمیت ولابیز کے پسندیدہ سبزیوں کو جنگلات میں پھینکا گیا تاکہ ان کی خوراک کی قلت پوری ہوسکے۔

اس حوالے سے انتظامیہ کا کہنا ہے کہ انہوں نے اب تک 2 ہزار 200 کلوگرام تک کی تازہ سبزیاں جنگلات میں میں گرائی ہیں تاکہ یہ جانور انہیں کھاسکیں۔والابیز کے علاوہ دیگر سبزی خود جانور بھی انہیں کھا کر زندہ رہ سکتے ہیں۔

نیوساؤتھ ویلز کے وزیر ماحولیات میٹ کین کا کہنا تھا کہ زندہ بچ جانے والے جانور آتشزدہ علاقوں سے بھاگنے میں تو کامیاب ہوئے لیکن ان کیلئےخوراک ذریعہ (جنگلات) ہی ختم ہوگئے ہیں۔

واضح رہے کہ ورلڈ وائلڈلائف فنڈ نے اندازہ لگاتے ہوئے بتایا ہے کہ پورے آسٹریلیا میں آگ سے بلواسطہ اور بلاواسطہ 1ارب 25 کروڑ جانور ہلاک ہوئے ہیں۔