پی ٹی آئی رہنما جیل میں قید شہباز گل سے ملاقات میں ناکام

170

راولپنڈی: پی ٹی آئی کے وفد کی 2 بار کوششوں کے بعد بھی سینٹرل جیل اڈیالہ راولپنڈی میں اداروں کو اکسانے و بغاوت کے مقدمے میں قید شہباز گل  سے ملاقات نہ ہوسکی۔

نجی ٹی وی کے مطابق حکام نے پی ٹی آئی کے وفد کو آگاہ کیا کہ شہباز گل کو میڈیکل کے لیے اسلام آباد لے کر جانے کے لیے جیل میں موجود ہیں اس لیے ملاقات ممکن نہیں ہوسکتی۔بعدازاں سینٹرل جیل اڈیالہ کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے پی ٹی آئی رہنماؤں کا کہنا تھا کہ چیئرمین عمران خان کے احکامات پر ان کے چیف آف اسٹاف شہباز گل سے اڈیالہ جیل ملاقات کرنے آئے تھے لیکن جیل انتظامیہ نے ملاقات کی اجازت نہیں دی۔

عمر ایوب نے کہا کہ وفاقی وزیر داخلہ رانا ثنا الله کے حکم پر شہباز گل سے ملاقات نہیں کرنے دی گئی جبکہ عمران خان کے چیف آف اسٹاف کو صفائی کا موقع دینا چاہیے۔ علاوہ ازیں علی نواز کا کہنا تھا کہ شہباز گل کے بنیادی انسانی حقوق سلب کیے جارہے ہیں، وفاقی وزیر داخلہ کو پیغام ہے جب آپ جیل جائیں گے ایسا رویہ ہو سکتا ہے۔

بعدازاں ایک گھنٹے بعد وفد واپس اڈیالہ جیل پہنچا اور تقریباً 2 گھنٹہ جیل میں موجود رہنے کے بعد وفد واپس نکلا اور میڈیا کے روکنے کے باوجود بغیر بات کیے واپس روانہ ہوگیا۔ دوسری جانب جیل ذرائع کے مطابق شہباز گل نے میڈیکل کروانے کے لیے جیل سے باہر جانے  سے انکار کردیا اور کہا اگر میڈیکل ہونا ہے تو جیل ہی میں کروایا جائے۔