دوسراگال ٹیسٹ: پاکستان کو جیت کیلیے 419 رنزاور سری لنکا کو 9وکٹیں درکار

143

گال: پاکستان اور سری لنکا کے مابین گال میں جاری دوسرا ٹیسٹ فیصلہ کن مرحلے میں داخل ہو گیا ہے جہاں پاکستان کو ٹیسٹ اور سیریز جیتنے کیلئے419رنز جبکہ میزبان کو میچ اور سیریز بچانے کیلئے9وکٹیں درکار ہیں۔

508رنز ہدف کے تعاقب میں چوتھے دن کھیل کے اختتام پرپاکستان نے ایک وکٹ کے نقصان پر 89رنز بنالئے ہیں۔کپتان بابر اعظم 26اور امام الحق46رنز بنا کر ناقابل شکست ہیں۔ٹیسٹ کرکٹ میں آج تک کوئی بھی ٹیم اتنا بڑا ہدف حاصل نہیں کر سکی اور سب سے بڑے 418 رنز کے ہدف کے تعاقب کا اعزاز ویسٹ انڈیز کو حاصل ہے۔

گال میں کھیلے جارہے سیریز کے دوسرے ٹیسٹ میچ کے چوتھے دن سری لنکا نے 176رنز پانچ کھلاڑی آؤٹ سے اپنی دوسری نامکمل اننگز دوبارہ شروع کی تو اسے میچ میں 323رنز کی بڑی برتری حاصل تھی۔دھننجیا ڈی سلوا اور دمتھ کرونارتنے نے اننگز کا آغاز کیا اور اسکور کو آگے بڑھاتے ہوئے چھٹی وکٹ کے لیے جاری شراکت کو 126رنز تک پہنچا دیا۔

سری لنکن کپتان 61رنز بنانے کے بعد نعمان علی کی وکٹ بنے۔دھننجیا ڈی سلوا نے عمدہ بیٹنگ کا سلسلہ جاری رکھا اور پہلا میچ کھیلنے والے والے دمتھ ویلاگے کے ہمراہ مزید 35 رنز جوڑے، ویلاگے 18 رنز بنانے کے بعد نواز کی وکٹ بنے۔دھننجیا نے سنچری کی جانب پیش قدمی جاری رکھی اور رمیش مینڈس کے ساتھ شاندار شراکت قائم کرنے کے ساتھ ساتھ ٹیسٹ کرکٹ میں اپنی نویں سنچری بھی مکمل کرلی۔

دھننجیا اور مینڈس نے آٹھویں وکٹ کے لیے 82 رنز جوڑے جس کے بعد دھننجیا کی 109 رنز کی اننگز رن آٹ کی صورت میں اختتام کو پہنچی۔دھننجیا کے آٹ ہونے کے ساتھ ہی سری لنکا نے اپنی دوسری اننگز 360رنز 8کھلاڑی آٹ پر ڈکلیئر کرنے کا اعلان کردیا اور میچ میں پاکستان کو فتح کے لیے 508 رنز کا ہدف دیا ہے۔

ٹیسٹ کرکٹ میں آج تک کوئی بھی ٹیم اتنا بڑا ہدف حاصل نہیں کر سکی اور سب سے بڑے 418 رنز کے ہدف کے تعاقب کا اعزاز ویسٹ انڈیز کو حاصل ہے۔پاکستان نے ہدف کا تعاقب شروع کیا تو اوپنرز نے ٹیم کو 42 رنز کا معقول آغاز فراہم کیا، عبداللہ شفیق ایک مرتبہ پھر وکٹ پر سیٹ نظر آ رہے تھے لیکن ویلاگے نے عمدہ کیچ لے کر انہیں پویلین کا راستہ دکھا دیا۔اس کے بعد امام الحق کا ساتھ دینے کپتان بابر اعظم آئے اور دونوں کھلاڑی اب تک دوسری وکٹ کے لیے 47 رنز کی شراکت قائم کر چکے ہیں۔

جب خراب روشنی کے سبب چوتھے دن کا کھیل مقررہ وقت سے قبل ختم کیا گیا تو پاکستان نے ایک وکٹ کے نقصان پر 89 رنز بنائے تھے اور اسے میچ میں فتح کے لیے مزید 419 رنز درکار ہیں۔کپتان بابر اعظم 26اور امام الحق46رنز بنا کر ناقابل شکست ہیں۔