پنجاب: ڈپٹی کمشنرز کوحلقہ بندیاں کرنے کا پابند کردیا 

167

لاہور: پنجاب بھر میں نئے بلدیاتی نظام کے تحت ڈپٹی کمشنرز کوحلقہ بندیاں کرنے کا پابند کردیا گیا ۔پنجاب حکومت کی جانب سے الیکشن کمیشن کی ہدایات پر ڈپٹی کمشنر زکوعملدرآمد کرنے کی ہدایت کردی گئی۔

محکمہ لوکل گورنمنٹ اینڈ کمیونٹی کی جانب سے ڈپٹی کمشنرز کومراسلہ جاری کیاگیا جس میں کہا گیا گیا ہے کہ الیکشن کمیشن کی ہدایات کے مطابق آئین پاکستان کے تحت الیکشن کمیشن کے آرٹیکل 222بی اور سیکشن 221الیکشن ایکٹ کے مطابق حلقہ بندیاں کی جائیں گی۔ الیکشن کمیشن نے شیڈول جاری کردیاہے جس میں نیبر ہڈ کونسل اور ویلج کی حد بندیاں کی جائیں گی۔

الیکشن کمیشن کے مطابق صوبہ بھر میں حد بندیاں کرنے کیلئے تعینات کیے گئے افسران، ڈیلیمیشن کمیٹیوں کے ممبران کو حد بندی کے عمل کے خاتمے تک تبدیل نہیں کیا جائے گا۔الیکشن کمیشن کے مراسلے کے مطابق ضلع جیسی انتظامی اکائیوں کی موجودہ حدود کو مدنظر رکھتے ہوئے گاں اور پڑوس کی کونسلوں کی حد بندی کرنے کی ضرورت ہے۔تحصیل، قانون گو حلقہ، پٹوار حلقوں، ریونیو اسٹیٹس، درجات اور شہری اور دیہی مقامی علاقوں کی وسعت وغیرہ کے مطابق ان یونٹوں کی حدود، شہری اور دیہی مقامی علاقوں کی حدود میں کسی قسم کی تبدیلی نہیں کی جائے گی جبکہ حد بندی کی کارروائی جاری ہے موجودہ نظام میں تبدیلی نہ کی جائے تاکہ کوئی رکاوٹ پیدا نہ ہو اور ہموار کارروائی کی جاسکے۔

مراسلے کے مطابق پاکستان کے الیکشن کمیشن کو یہ ہدایت دیتے ہوئے خوشی ہوئی ہے کہ موجودہ انتظامی اکائیوں، میٹروپولیٹن کارپوریشنز اور ناکارہ مقامی حکومتوں کی حدود، جو پنجاب لوکل گورنمنٹ آرڈیننس 2021 کے نفاذ سے پہلے موجود تھیں، فوری طور پر بند کر دی جائیں گی اور کسی بھی انتظامی یونٹس کی حدود میں کوئی تبدیلی نہیں کی جائے گی۔صوبہ پنجاب میں حد بندی کے عمل کے اختتام تک اس ہدایت پر عمل کیاجائے گا ۔