امریکا کا سفری پابندیاں ختم کرنے کا اعلان

151

واشنگٹن: امریکا نے کورونا وبا کے باعث غیر ملکی مسافروں پرلگائی گئی سفری پابندیاں ختم کرنے کا اعلان کر دیا ہے، اب امریکی شہریوں کے علاوہ غیرملکی شہری بھی امریکا کا سفر کرسکیں گے۔

بین الاقوامی میڈیا کے مطابق اب امریکی شہریوں کے علاوہ غیرملکی شہری بھی امریکا کا سفر کرسکیں گے، 2020 میں وبائی مرض شروع ہونے کے بعد پہلی بار پروازوں کی پابندیاں ختم  کی گئیں ۔

وائٹ ہاؤس نے امریکا جانے والے غیر ملکی مسافروں کے لیے نئے قوانین کا خاکہ بھی پیش کر دیا ہے ، نئے قوانین اور پابندیوں میں نرمی کا اطلاق 8 نومبر سے ہوگا جبکہ امریکا کے لیے سفر کرنے والوں کو کورونا ویکسینیشن سرٹیفکیٹ لازمی دکھانا ہوگا۔

امریکی ہیلتھ ریگولیٹرز کی طرف سے منظور شدہ کوئی بھی ویکسین قابل قبول  ہوگی، ویکسین شدہ افراد کو 3 دن پہلے اور غیرویکسین شدہ کو ایک دن پہلے کووڈ ٹیسٹ لازمی کروانا ہوگا۔

بائیڈن انتظامیہ نے کہا کہ 18سال سے کم عمر کے بچے ویکسینیشن کی شرط سے مستثنیٰ ہوں گے لیکن پھر بھی سفر کے تین دن کے اندر لیا گیا منفی ٹیسٹ فراہم کرنا ضروری ہوگا۔

خیال رہے اگلے ماہ سے امریکی سفری پابندیوں سے چھوٹ حاصل کرنے والے  ممالک میں برطانیہ، یورپ، چین اور بھارت سمیت درجنوں ممالک شامل ہوں گے۔

واضح رہے اس وقت برازیل، چین، جنوبی افریقہ، برطانیہ، یورپ کے 26ممالک، آئرلینڈ، بھارت اور ایران سے آنے والوں  پر سفری پابندیاں عائد ہیں۔