اولمپکس میں پاکستان کی ناقص کارکردگی کی ذمہ دارایسوسی ایشن ہے،فہمیدہ مرزا

73

ْپشاور(جسارت نیوز)وفاقی وزیر برائے بین الصوبائی رابطہ فہمیدہ مرزا نے جاپان میں کھیلے گئے اولمپکس میچز میں پاکستان کی ناقص کارکردگی کی ذمہ دار پاکستان اولمپکس ایسوسی ایشن کو ٹھہراتے ہوئے کہا ہے کہ17سال سے شخصیات نے اداروں پر قبضہ کیا ہوا جو کہ اب نہیں چلے گا ،وزیر اعظم پاکستان عمران خان کی ویژن کیمطابق ملک بھر میں اسپورٹس کے فروغ کے لیے عملی اقدامات اٹھائے جا رہے ہیں ، نئے ٹیلنٹ کو سامنے لانے کے لئے تمام صوبوں میں ٹرائلز جاری ہیں جبکہ دوسرے ممالک کیطرح پاکستان میں بھی اسپورٹس کے حوالے سے شفاف نظام متعارف کرایا جارہا ہے جس سے اسپورٹس کو ملک بھر میں فروغ ملے گا ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز قیوم اسپورٹس کمپلیکس پشاور میں میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کیا ۔ اس موقع پر ، ڈی جی پاکستان اسپورٹس بورڈ کرنل(ر) آصف زمان، ڈی جی اسپورٹس خیبر پختونخوا اسفندیار خٹک ،ڈائریکٹر اسپورٹس سید ثقلین شاہ، ایڈمن آفیسر پشاورا سپورٹس کمپلیکس سید جعفر شاہ ، ایڈمن آفیسر حیات آباد اسپورٹس کمپلیکس شاہ فیصل ، چیف کوچ شفقت سمیت دیگر اہم شخصیات بھی انکے ہمراہ تھے۔ پریس بریفینگ سے خطاب کرتے ہوئے وفاقی وزیر برائے بین الصوبائی رابطہ فہمیدہ مرزا نے کہا کہ کئی سالوں سے پاکستان اسپورٹس کا گراف کافی نیچھے چلا گیا تھا مگر تحریک انصاف کی حکومت اسکو اوپر لانے کے لئے کافی کوششیں کر رہی ہیں ہماری حکومت سے قبل ملک میں اسپورٹس گورننس کے لیے کوئی اسٹرکچر ہی نہیں تھا جس پر ہم نے کام کر کے کافی چیزوں کو اسٹریم لائن کر لیا ہے ،انکا کہنا تھا کہ اسپورٹس کے فروغ اور ٹیلنٹ کو سامنے لانے کے لیے اسکولز اور کالج لیول پر ٹیلنٹ سرچ شروع کیا گیا ہے جبکہ ملکی سطح پر کھیلوں کے لئے منظم پالیسی بنا رہے ہیں جس کو بہت جلد عوام کے سامنے لائیں گے ملک میں نئی پالیسی کے نفاذ کے بعد کھیلوں سے متعلق معاملات بہتر انداز میں حل ہونگے،اولمپکس میں بد ترین کارکردگی کے سوال پر وفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ جاپان میں کھیلے گئے اولمپیکس میچز میں ناقص کارکردگی کا سارا ذمہ دار پاکستان اولمپکس ایسوسی ایشن ہے جس طریقے سے پاکستان کو شکست کا سامنا ہوا کافی حیرانگی ہوئی ،وفاقی وزیر نے کہا کہ ہماری بدقسمتی ہے کہ یہاں شخصیات نے اداروں پر قبضہ کیا ہوا ہے مگر اب ایسا نہیں چلے گا ، انہوں نے کہا کہ 2005 کے بعد کھیلوں کے لیے ملک میں کوئی پالیسی نہیں بنی ہے، وفاق اور صوبوں کے درمیان کھیلوں کے فروغ کے سلسلے میں باہمی رابطہ نہ ہونے کی وجہ سے ٹیلنٹ کو بہتر انداز میں سامنے لانے کے لیے کوئی مناسب اقدامات نہیں کیے گئے ہیں، اس لیے ملک بھر میں وزیراعظم پاکستان عمران خان کی ذاتی دلچسپی اور کھیلوں کی فروغ کیلئے نئی پالیسی لارہے ہیں جس کے تحت ہر شخص جواب دہ ہو گا کھیلوں کے لیے بنائی جانے والی نئی پالیسی کو جلد سے جلد انجام تک پہنچانے کے لیے تمام صوبوں کو اعتماد میں لیا گیا ہے ،ان کا کہنا تھا کہ ملک میں بد قسمتی سے شخصیات اپنے اپ کو اداروں سے بڑے سمجھتے ہیں، اگر حکومت ان کے مفاد کے خلاف پالیسی بناتی ہے تو یہ حکومت کے خلاف ہو جاتے ہیں ایک سوال کے جواب میں ان کا کہنا تھا کہ 17 سالوں سے اولمپکس ایسوسی ایشنز کے عہدوں پر بیٹھے اشرافیہ اپنی زمہ داریوں سے غافل ہیں۔