متعدد اداروں میں اربوں روپے کی بے قاعدگیاں ہوئیں،جاوید قصوری

103

لاہور (وقائع نگار خصوصی) امیر جماعت اسلامی پنجاب وسطی محمد جاوید قصوری نے کہا ہے کہ امیر جماعت سراج الحق کی اپیل پر 24 ستمبر بروز جمعۃ المبارک کو مہنگائی، بے روزگاری، لاقانونیت اور کرپشن کیخلاف ملک گیریوم احتجاج منایا جائے گا۔ جس میں لوگوں کی بڑی تعداد کی شرکت کو یقینی بنانے کے لیے کارکنان کو ٹاسک دے دیا گیا ہے۔ لاہور سمیت پورے صوبے میں احتجاجی مظاہرے اور ریلیاں نکالی جائیں گی۔ موجودہ حکمرانوں نے عوام کو مسائل میں اضافے کے سوا کچھ نہیں دیا۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز اہم اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی کے دور حکومت میں پیٹرول 45 روپے فی لیٹر تک مہنگا ہوچکا ہے۔ اسٹیٹ بینک نے ملک میں مزید مہنگائی بڑھنے کا خدشہ ظاہر کردیا ہے۔ سٹاک مارکیٹ میںمندی سے سرمایہ داروں کے 42ارب روپے ڈوب چکے ہیں۔ ڈالر کی اڑان نے روپے کی بے قدری میں اضافہ کیاہے اور یہ سلسلہ ہنوز جاری ہے۔ انہوں نے کہا کہ آڈیٹر جنرل کی رپورٹ کے مطابق ملک کے کئی اداروںمیں 205ارب روپے کی بے قاعدگیوں کا انکشاف تبدیلی سرکار کی کارکردگی پر بڑا سوالیہ نشان ہے۔ پیٹرولیم، ٹیلی کام، این ایچ اے، پی ڈبلیو ڈی اسٹیٹ آفس اور اوگرا میں ذمے داران کا تعین ہونا چاہیے۔ مہنگی ایل این جی خریداری سے ایک ارب 65 کروڑ 97 لاکھ روپے اور کم سیلز ٹیکس سے پونے 19کروڑ روپے کا نقصان پہنچا ہے۔ محمد جاوید قصوری نے اس حوالے سے کہا کہ حکومتی اعداد و شمار کیخلاف مہنگائی کے طوفان نے ہر پاکستانی کو متاثر کیا ہے۔ عوام کی زندگی روز بروز مشکل سے مشکل تر ہوتی چلی جارہی ہے۔ مٹھی بھر اشرافیہ نے پاکستان کا جو حشر نشر کیا ہے، اس کی مثال کہیں نہیں ملتی۔