مقبوضہ کشمیر میں ریاستی جبر سے خطے کو خطرات لاحق ہیں،آرمی چیف

77

راولپنڈی/اسلام آباد( خبر ایجنسیاں) آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے کہا ہے کہ کشمیر مسئلے کا بحران علاقائی سلامتی کے لیے خطرہ ہے۔آئی ایس پی آر نے ٹوئٹ میں کہا کہ آرمی چیف نے یوم استحصال کشمیر پر کشمیریوں سے یکجہتی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ مسئلہ کشمیر کشمیری عوام کی امنگوں اور اقوام متحدہ کی قرار دادوں کے مطابق حل ہونا چاہیے، کشمیریوں کی امنگوں کے مطابق تنازع حل کیے بغیر امن ممکن نہیں۔کشمیر کے حل سے ہی خطے میں امن اور استحکام آ سکتا ہے، مقبوضہ کشمیر میں بدترین ریاستی جبر جاری ہے، مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج کا غیر انسانی محاصرہ جاری ہے، مقبوضہ کشمیر میں آبادی کا تناسب تبدیل کیا جا رہا ہے۔ آرمی چیف نے مزید کہا کہ مقبوضہ کشمیر میں عالمی قوانین کی خلاف ورزیاں ہو رہی ہیں، مقبوضہ کشمیر میں سلامتی کا بحران علاقائی سلامتی کے لیے خطرہ ہے۔دوسری جانب ائر چیف مارشل ظہیر احمد بابر سدھو نے کہا ہے کہ عالمی برادری کو مقبوضہ جموں و کشمیر کے عوام کے بارے میں اپنی ذمے داری کو فراموش نہیں کرنا چاہیے۔اپنے پیغام میں سربراہ پاک فضائیہ نے مقبوضہ کشمیر کی حیثیت، آبادی میں غیر قانونی تبدیلی، جاری فوجی محاصرے اور انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزی کے دو سال مکمل ہونے پر مقبوضہ جموں و کشمیر کے بہادر اورجفاکش عوام کی بھارتی غاصبانہ تسلط کے خلاف پر امن جدو جہد میں ان کے ساتھ کھڑے ہونے کے عزم کا اظہار کیا۔انہوں نے کہا کہ ہم حقِ خود ارادیت کے حصول کے لیے کی جانے والی جدوجہد میں مقبوضہ جموں و کشمیر کے عوام کی سیاسی، اخلاقی اور سفارتی حمایت کی مستحکم پالیسی پر عمل پیرا رہیں گے۔