پی ایس ایل کے افق پر ایک اور ابھرتا ہوا ستارہ

341

آلراؤنڈ صلاحیتوں کے مالک اسلام آباد یونائیٹڈ کےایمرجنگ کرکٹر محمد وسیم جونیئر نے اس عزم کا اظہار کیا کہ وہ ایچ بی ایل پاکستان سپر لیگ 6 میں نمایاں کارکردگی کا مظاہرہ کرنا چاہتے ہیں، ان کا اصل ہدف پاکستان کا بہترین آلراؤنڈر بننا ہے۔

شمالی وزیرستان سے تعلق رکھنے والے آلراؤنڈر محمد وسیم جونیئر نےایچ بی ایل پی ایس ایل 6 میں اسلام آباد یونائیٹڈ کی نمائندگی سے قبل بہت محنت کی۔ انہوں نے 2011میں ٹیپ بال کرکٹ کا آغاز کیا اور پھر  ہارڈ بال کرکٹ کھیلنے کے لیے پشاور منتقل ہوگئے۔

محمد وسیم کا کہنا ہے کہ ان کے آبائی علاقے،  وزیرستان میں کھیل کے مواقع نہ ہونے کے برابر ہیں اور شروع میں تو ان کے والد بھی ان کے کرکٹ کھیلنے پر خوش نہیں تھے مگر پھر چچا کی رہنمائی اور قریبی دوستوں کے تعاون نے انہیں آگے بڑھنے میں بہت مدد کی۔

نوجوان آلراؤنڈر جنوبی افریقہ میں کھیلے گئے آئی سی سی انڈر19 کرکٹ ورلڈ کپ 2020میں پاکستان کی نمائندگی کا اعزاز حاصل کرچکے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ گذشتہ سال ایونٹ میں شرکت ایک یادگار تجربہ تھا اور وہ ٹورنامنٹ میں پاکستان انڈ 19 کرکٹ ٹیم کی نمائندگی پر فخر محسوس کرتے ہیں۔

گذشتہ سال کھیلے گئے اس ایونٹ میں محمد وسیم جونیئر نے اسکاٹ لینڈ کے خلاف بہترین کارکردگی پیش کرتے ہوئے پانچ وکٹیں حاصل کی تھیں۔پاکستان انڈر 19 کرکٹ ٹیم نے ٹورنامنٹ میں تیسری پوزیشن حاصل کی تھی۔

آئی سی سی انڈر 19 کرکٹ ورلڈکپ2020 کے سیمی فائنل میں بھارت سے شکست پر اپنی مایوسی کا اظہار کرتے ہوئے نوجوان کرکٹر نے کہا کہ اس میچ میں ناکامی نے سب کو افسردہ کردیا تھامگر اب وقت آگے بڑھ چکا ہے۔

اسلام آباد یونائیٹڈ کے اسکواڈ میں شمولیت پر مسرور نوجوان آلراؤنڈر کاکہناہےکہ  اسلام آباد یونائیٹڈ ایک بہترین فرنچائز ہےکہ جہاں ہمیں حسن علی اور کپتان شاداب خان جیسے ٹی ٹونٹی کرکٹ کے تجربہ کار کھلاڑیوں کا ساتھ میسر ہیں اور یہاں سب کھلاڑی ایک دوسرے کی مکمل رہنمائی کرتے ہیں۔

ایچ بی ایل پی ایس ایل کے چھٹے ایڈیشن میں محمد وسیم کا آغاز شاندار رہا  انہوں نےایونٹ میں اپنے پہلے میچ میں ملتان سلطانز کے خلاف 4 اوورز میں 29رنز کے عوض تین کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا۔ اس میچ میں انہوں نے مڈل آرڈر بیٹسمین صہیب مقصود،ان فارم بیٹسمین  محمد رضوان اور ٹی ٹونٹی اسپیشلسٹ شاہد آفریدی کو آؤٹ کیا۔

انہوں نے ایک ہی اوور میں محمد رضوان اور شاہد آفریدی کو پویلین کی راہ دکھائی۔نوجوان آلراؤنڈر نے شاہین شاہ آفریدی، حارث رؤف اورنسیم شاہ کی روایت کے برعکس بوم بوم آفریدی کو آؤٹ کرنے کا جشن منایا مگر انہوں نے اسے فطری ردعمل قرار دیا ہے۔

ایچ بی ایل پی ایس ایل میں شامل تمام ایمرجنگ کرکٹرز کی طرح محمد وسیم جونیئر بھی پاکستان کی نمائندگی کا اعزاز حاصل کرنا چاہتے ہیں۔