پاکستان میں ہیلتھ ورکرز کورونا وائرس کے باعث موت کا شکار

118

اسلام آباد کے پمزاسپتال کے سابق چیف فارماسسٹ ڈاکٹر جاوید اقبال کورونا وائرس کے سبب انتقال کرگئے جبکہ مانسہرہ میں بھی وبا سے لیڈی ڈاکٹر جان کی بازی ہارگئیں۔

ترجمان پمز اسپتال اسلام آباد ڈاکٹر وسیم خواجہ کے مطابق ڈاکٹر جاوید اقبال کئی روز سے کورونا وائرس کے باعث بیمار تھے جبکہ وزارتِ صحت کے مطابق  پمز سمیت اسلام آباد میں 350 سے زائد ہیلتھ ورکر کورونا وائرس سے متاثر ہو چکے ہیں۔

 ڈاکٹر وسیم خواجہ نے کہا کہ اب تک پمز اسپتال کے 4 ہیلتھ ورکرز کورونا وائرس سے موت کا شکار ہوچکے ہیں جبکہ پچھلے ماہ پمز اسپتال کے شعبہ چلڈرن کے ڈائریکٹر ڈاکٹر منظور بھی  شدید علالت کے بعد انتقال کرگئے تھے۔

دوسری جانب مانسہرہ میں بھی  کورونا وائرس سے بیمار لیڈی ڈاکٹر انیلا جان کی بازی ہارگئیں۔

صدر ڈاکٹرز ایسوسی ایشن کا کہنا تھا کہ لیڈی ڈاکٹر انیلا دو ہفتوں سے مانسہرہ کے نجی اسپتال میں زیرِعلاج تھیں اور آج صبح موت کا شکار ہوگئیں۔

واضح رہے نیشنل کمانڈ اینڈ کنٹرول سینٹر (این سی او سی) کے اعداد و شمار کے مطابق پاکستان میں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کورونا وائرس کے مزید 1 ہزار 346 کیسز سامنے آئے ہیں، مزید 53 افراد اس موذی وباء کے سامنے زندگی کی بازی ہار گئے جبکہ اس بیماری سے 1 ہزار 542 مریض شفایاب ہو گئے۔

ملک بھر میں کورونا وائرس سے انتقال کرنے والوں کی مجموعی تعداد 11 ہزار 967 ہو گئی ہے، جبکہ کُل مریضوں کی تعداد 5 لاکھ 54 ہزار 474 ہو چکی ہے۔