بحرین اسرائیل معاہدہ، فلسطین کے حوالے سے اصولی موقف پر قائم ہیں، پاکستان

90

اسلام آباد(صباح نیوز)پاکستان نے ایک اور عرب ملک بحرین اور اسرائیل کے درمیان امن معاہدے کے اعلان پر اپنے ردعمل میں کہا ہے کہ فلسطین اور مشرق وسطیٰ کے امن عمل پر پاکستان کے موقف میں کوئی تبدیلی نہیں ہوئی ہے۔ترجمان دفتر خارجہ زاہد حفیظ کی جانب سے جاری کردہ اعلامیے میں کہا گیا کہ اس معاملے پر پہلے والا بیان ہی تصور کیا جائے۔انہوں نے کہا کہ مشرق وسطیٰ کے خطے میں امن اور استحکام پاکستان کی اولین ترجیح ہے جبکہ فلسطین پر پاکستان کے اصولی موقف میں کوئی تبدیلی نہیں ہوئی ہے۔دفتر خارجہ کے ترجمان کا کہنا تھا کہ ہم فلسطینیوں کے حق خود ارادیت سمیت تمام جائز حقوق کے مکمل ادراک کا عزم کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ایک منصفانہ، جامع اور دیرپا امن کے لیے پاکستان اقوام متحدہ اور او آئی سی کی متعلقہ قرار دادوں سمیت بین الاقوامی قوانین کے ساتھ دو ریاستی حل کے حامی ہیں جبکہ 1967ء سے پہلے کی سرحدوں اور بین المقدس کے بطور دارالحکومت فلسطین کی حمایت کرتے ہیں۔بیان میں کہا گیا کہ حالیہ پیش رفت کے تناظر میں پاکستان کے نقطہ نظر کی تشخیص اس رہنمائی سے کی جائے گی کہ کس طرح فلسطینیوں کے حقوق اور امنگوں کا خیال رکھا جاتا ہے اور کس طرح علاقائی امن، سلامتی اور استحکام کا تحفظ کیا جاتا ہے۔