چوہدری شجاعت آدھی بات کرکے لب کشائی پر مجبور نہ کریں، حافظ حسین

136

کوئٹہ(مانیٹرنگ ڈیسک)جمعیت علمائے اسلام (جے یو آئی) کے مرکزی ترجمان حافظ حسین احمد نے کہا ہے کہ چودھری شجاعت حسین آدھی بات کرکے ہمیں لب کشائی پر مجبور نہ کریں۔ مذاکرات کی جو امانت چودھری برادران کے پاس ہے اس سے قوم کو آگاہ کریں۔حافظ حسین احمد نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ چودھری برادران بتائیں ہماری امانت کی کیا پوزیشن ہے؟ ہمیں اپنی امانتیں خطرے میں نظر آرہی ہیں۔حافظ حسین احمد نے کہا کہ دھرنے کے دوران اپوزیشن کے رہنما پہلے ہی نیم دلی سے ہمارے ساتھ
تھے،چودھری برادران سے مذاکرات کے بعد مزید فاصلہ کرگئے۔ان کا کہنا ہے کہ چودھری شجاعت آدھی بات کرنے کے بجائے پورا سچ بتائیں، آدھی بات کرکے ہمیں لب کشائی پر مجبور نہ کریں۔خیال رہے کہ مسلم لیگ (ق) کے صدر چودھری شجاعت حسین نے اپنے ایک حالیہ بیان میںکہا ہے کہ کچھ لوگ اسلام آباد میں مولانا فضل الرحمان کے دھرنے پر دھاوا بولنے کے حامی تھے، عمران خان سے جا کر کوئی بات کرنے کو تیار نہیں تھا،پرویزالٰہی حکومتی مذاکراتی کمیٹی کے ممبر نہیں تھے جس پر پرویز الٰہی سے کہا گیا کہ وہ عمران خان سے بات کریں۔صدر ق لیگ کے مطابق پرویزالٰہی نے عمران خان کو مشورہ دیا کہ اگر مار کٹائی شروع ہوگئی اور کوئی آدمی مر گیا تو الزام لینے پر کوئی تیار نہیں ہوگااور وزیراعظم کوہر چیز کا جواب دینا پڑے گا۔چودھری شجاعت کا کہنا تھا کہ پرویز الٰہی کے بتانے پر فیصلہ مؤخر کردیا گیا اور معاملہ افہام و تفہیم سے حل ہو۔