کورونا وائرس کا شکار ایرانی رکن پارلیمنٹ انتقال کر گئے

72

تہران(مانیٹرنگ ڈیسک) ایران میںکورونا وائرس کے باعث رکن پارلیمنٹ انتقال کر گئے۔ایرانی رکن پارلیمنٹ محمد علی رمضانی جنہیں چند روز قبل کورونا وائرس کی تشخیص ہوئی تھی وہ گزشتہ صبح انتقال کر گئے ہیں۔ سرکاری میڈیاکے مطابق محمد علی رمضانی دستک حال ہی میں آستانہ اشرفیہ کے رکن منتخب ہوئے تھے،وہ چند روز قبل ہی وائرس کا شکار ہوئے تھے تاہم ایرانی میڈیا نے یہ نہیں کہا کہ محمد علی رمضانی کی موت کورونا وائرس کے باعث ہوئی۔ان کا کہنا ہے کہ محمد علی رمضائی کی موت فلو اور ایسے کیمیائی زخموں کے باعث ہوئی جو انہیں ایران عراق جنگ کے دوران آئے تھے۔گذشتہ روز کورونا وائرس کے باعث ایران کے
سابق سفیر چل بسے تھے۔ سعید ہادی تہران کے اسپتال میں زیرعلاج تھے۔سعید ہادی ویٹی کن میں بطور سفیر خدمات انجام دے چکے ہیں، ان کی عمر 81 سال تھی۔واضح رہے کہ ایران کی نائب صدر برائے خواتین اور عائلی امور معصومہ ابتکار بھی کورونا وائرس کا شکار ہو گئی ہیں۔دوسری جانب بتایا گیا ہے کہ ایرانی نائب صدراسحاق جہانگیری میں بھی کورونا وائرس کی تصدیق ہوگئی ہے، ایرانی نائب صدر کے ٹیسٹ کیے گئے جن میں اسحاق جہانگیری میں کورونا وائرس کی تصدیق ہوئی ہے۔اس سے قبل ایران میں نائب وزیر صحت ارج حریرچی اور رکن پارلیمنٹ میں کورونا وائرس کی تصدیق ہوئی تھی۔
ایرانی رکن پارلیمنٹ انتقال