چینی کمپنی نے ریت کے ذرے جتنا کیمرہ بنالیا، گنیز بک آف ورلڈ ریکارڈ میں نام درج

256

چین کی ایک کمپنی نے ریت کے ذرے جتنا کیمرہ بنا کر سرجریز کو اور بھی آسان بنادیا، اس کیمرے کو دنیا کے سب سے چھوٹے کیمرے کے طور پر گنیز بک آف ورلڈ ریکارڈ میں درج کرلیا گیا ہے۔

چینی کمپنی اومنی وڑن کی جانب سے ’OmniVision OV6948‘ نامی کیمرہ بنایا گیا ہے جو سائز میں ریت کے ذرے جتنا ہے اور یہ 40 ہزار پکسل کی تصویر بنانے کی صلاحیت رکھتا ہے۔

یہ کیمرہ 120 ڈگری کا سپر وائڈ اینگل ویو فراہم کرتا ہے جو فل فریم کیمرہ کے 14mm کے برابر ہے۔

امریکی ریاست کیلیفورنیا میں قائم چینی کمپنی کی جانب سے ایجاد کیا جانے والا یہ کیمرہ انسانی جسم کی چھوٹی سے چھوٹی رگوں میں داخل کرنے کیلئے ڈیزائن کیا گیا ہے

جس کے باعث سرجنز کو سرجریز کے دوران بہت زیادہ سہولت ملے گی۔

اس کیمرے کی ایجاد سے پہلے بہت سے آپریشن اندازے کی بنا پر کیے جاتے تھے لیکن اب ڈاکٹرز کو بہتر تصویر کے ذریعے اصل صورتحال سے آگاہی ملے گی۔

کمپنی کا کہنا ہے کہ اس کیمرے کی مدد سے نیورولوجی، اوفتھالمولوجی، ای این ٹی، کارڈیولوجی، سپائنل انجریز، یورولوجی، گائنا کولوجی اور آرتھروسکوپی کے شعبے میں انقلاب برپا ہوجائے گا۔

یہ کیمرہ انتہائی کم انرجی کا استعمال کرتا ہے جس کی وجہ سے جسم کے اندر حدت پیدا نہیں ہوگی اور رگوں کو کوئی نقصان نہیں پہنچے گا۔