لیبیا: فوج کے ہاتھوں کرائے کے 35روسی جنگجو ہلاک

75

ماسکو (انٹرنیشنل ڈیسک) لیبیا میں باغی ملیشیا کے سربراہ خلیفہ حفتر کی حمایت میں لڑنے والے کرائے کے35 روسی جنگجوؤں کی ہلاکت کا انکشاف ہوا ہے۔ روسی ذرائع ابلاغ کے مطابق مارے جانے والوں نے رواں برس کے اوائل میں دارالحکومت طرابلس میں لڑائی کا آغاز کیا تھا جبکہ کرائے کے جنگجوؤں کا تعلق ’ویگنز‘ گروپ سے تھا جو عسکری کانٹریکٹر یوجنی پر گوزن کے ادارے سے منسلک تھے۔ بتایا گیا ہے کہ یہ ہلاکتیں لیبیا کے دارالحکومت طرابلس کے مضافات میں ہونے والی فضائی کارروائی کے دوران ہوئیں۔ اس حوالے سے امریکی نشریاتی ادارے کے مطابق روسی وزارت خارجہ کی خاتون ترجمان ماریا زخارورا نے بتایا کہ ان کے پاس تفصیلی معلومات نہیں، تاہم اس قسم کے سوالات کے لیے روسی وزارت دفاع سے رابطہ کیا جائے۔ روسی وزارت خارجہ کی ترجمان کا کہنا تھا کہ کرائے کے جنگجوؤں کا کریملن سے کوئی تعلق نہیں، تاہم قانونی طور پر روس کے پاس اس بات کا کوئی اختیار نہیں کہ وہ نجی روسی شہریوں کو بیرون ملک جا کر کام کرنے سے روک سکے، تاہم اگر روسی شہری کو کوئی مسئلہ درپیش ہو تو ہمارے سفارتی مشن انہیں مدد فراہم کرتے ہیں۔ ’مدوزا‘ نامی ایک خودمختار تحقیقاتی ویب سائٹ نے جمعرات کے روز خبر شائع کی ہے جس میں بتایا گیا ہے کہ گزشتہ ماہ ایک فضائی حملے میں ’’ویگنر گروپ‘‘کے 35 جنگجو ہلاک ہوئے۔