۔ 2023.24ء تک پاکستانی برآمدات کا حجم 36.7 ارب ڈالر تک پہنچنے کا امکان

67

 

اسلام آباد(اے پی پی)عالمی مالیاتی فنڈ (آئی ایم ایف)نے کہا ہے کہ مالی سال 2023-24ء تک پاکستان کی برآمدات کا حجم 36.7 ارب ڈالرجب کہ ٹیکسوں کی وصولی کا حجم 9.48 ٹریلین ڈالر تک پہنچنے کا امکان ہے۔آئی ایم ایف نے یہ پیش گوئی اپنی حالیہ اسٹاف رپورٹ میں کی ہے۔
رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ پاکستان کے حسابات جاریہ کا خسارہ جو 2017ء میں 19.9 ارب ڈالر تھا میں بتدریج کمی آئی تھی۔ جاری مالی سال کے دوران پاکستان کے حسابات جاریہ کا خسارہ 6.95 ارب ڈالر تک گر جائے گا جبکہ مالی سال 2020-21ء میں اس میں مزید کمی آئے گی اور آئندہ مالی سال کے اختتام پر پاکستان کے حسابات جاریہ کا خسارہ مزید کم ہو کر 5.49 ارب ڈالر ہو جائے گا۔ اسی طرح جاری مالی سال میں تجارتی خسارہ گر کر 24.9 ارب ڈالر ہو جائے گا۔ گزشتہ مالی سال کے دوران پاکستان کا تجارتی خسارہ 29.46 ارب ڈالر ریکارڈ کیا گیا تھا۔ رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ موجودہ حکومت کی جانب سے مالیاتی استحکام اور مجموعی معیشت کی بہتری کے لیے اٹھائے جانے والے اقدامات کے نتیجے میں ایف بی آ ر رواں سال کیلیے 5.5 ٹریلین ڈالر کے ٹیکس اہداف کے حصول میں کامیابی متوقع ہے۔
پاکستانی برآمدات