تریپورہ میں بی جے پی کی انتخابی فتح کے بعد لینن کا مجسمہ مسمار

85
اگرتلا: تریپورہ کے ریاستی انتخابات میں بی جے پی کی فتح کے بعد کارکن لینن کا مجسمہ گرا رہے ہیں
اگرتلا: تریپورہ کے ریاستی انتخابات میں بی جے پی کی فتح کے بعد کارکن لینن کا مجسمہ گرا رہے ہیں

نئی دہلی (انٹرنیشنل ڈیسک) بھارتی صوبے تریپورہ کے اسمبلی انتخابات میں ہندو قوم پرست حکمران جماعت بھارتیہ جنتا پارٹی کی کامیابی کے بعد حالات خراب ہو گئے۔ ذرائع ابلاغ کے مطابق پرتشدد واقعات کے دوران روس کے ہیرو ولادیمیر لینن کے مجسمہ پر بلڈوزر چلا کر منہدم کردیا گیا ہے۔ 3 دن پہلے آنے والے اسمبلی انتخابات کے نتائج میں بھارتیہ جنتا پارٹی نے پچھلے 25 سال سے حکومت کرنے والی بائیں بازو کی کمیونسٹ پارٹی آف انڈیا مارکسی (سی پی ایم) کوبری طرح شکست دی ہے۔ لینن کے مجسمے کو گرائے جانے کی وڈیو سوشل میڈیا پر بھی پھیلا دی گئی۔ صورت حال کی سنگینی کے پیش نظر تمام متاثرہ علاقوں میں حکم امتناعی نافذ کردیا گیا ہے، جس کے تحت کسی مقام پر 5 سے زیادہ افراد کے جمع ہونے پر پابندی ہے۔ اُدھر سی پی ایم کی قیادت میں ایک وفد نے وزیر اعظم سے صوبے میں امن بحال کرنے اور قصورواروں کیخلاف سخت کارروائی کا مطالبہ کیا گیا ہے۔ بائیں بازو کی جماعت نے بی جے پی اور آر ایس ایس پر حالات کی خرابی کی ذمے داری عائد کی ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ