‘شوگر ملزآڈٹ میں 619ارب روپے کی ٹیکس چوری سامنے آئی’

264

مشیرداخلہ و احتساب شہزاداکبر نے کہا ہے کہ حکومت نے چینی بحران پر بھی شفاف انکوائری کرائی، شوگر ملزآڈٹ کے نتیجے میں 619ارب روپے کی ٹیکس چوری سامنے آئی۔

اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے شہزاداکبر نے کہا کہ احتساب کا عمل تفتیش کے بغیر مکمل  نہیں ہوتا تفتیش کے بغیرکسی چیزکی خرابی کاپتہ نہیں چلایاجاسکتا، شوگرانکوائری کمیشن کی تحقیقات میں انکشافات ہوئے ماہرین کے ذریعے انکوائریز کی  گئیں شوگر انکوائری کمیشن کی سفارشات کی روشنی میں کارروائی کی گئی۔

انہوں نے کہا کہ ماضی میں متعدد انکوائریز کو پبلک نہیں  کیاگیا، پی ٹی آئی حکومت نے ہر معاملے پرانکوائری کرائی حکومت نے چینی بحران پر بھی شفاف انکوائری کرائی، شوگر ملزآڈٹ کے نتیجے میں 619ارب روپے کی ٹیکس چوری سامنے آئی ، 89 ملزکا آڈٹ مکمل کرکے ٹیکس کا نفاذ کردیاگیا، 89ملز میں بعض ایسی  ہیں جن کے آڈٹ نہیں ہوئے ۔

مشیر داخلہ واحتساب نے کہا کہ ٹیکس کے نفاذ  کے بعد شوگرملز کاٹیکس دو گنا بڑھ گیا گزشتہ سال شوگر ملز ٹیکس کی مد میں دگنا اضافہ ہوا، چھ شوگر ملزمالکان نے عدالت سےاسٹے لیا ہوا ہے چینی کی بلیک مارکیٹنگ سے ٹیکس کانقصان ہوتاہے ماضی میں جوریٹ حکومت مقرر کرتی تھی وہ کسانوں کونہیں ملتاتھا ماضی میں گنے کے کاشتکاروں کو مناسب معاوضہ نہیں ملتاتھا نئی قانون سازی میں سٹےبازی کوغیرقانونی قراردیاگیاہے۔