اے پی این ایس کا اخبارات کو واجبات کی عدم ادائیگی پر اظہار تشویش

125

اسلام آباد (نمائندہ جسارت) اے پی این ایس نے وزیر اعظم کی واضح ہدایات کے باوجود اخبارات کو واجب الادا رقوم کی ادائیگی نہ ہونے پر گہری تشویش کا اظہار کیا ہے۔ سرمد علی سیکرٹری جنرل اے پی این ایس نے سینئر نائب صدر رمیزہ مجید نظامی کی زیر صدارت مجلس عاملہ کے اجلاس کے فیصلوں کا اعلان کرتے ہوئے کہا ہے کہ مجلس عاملہ کے اجلاس میں اس امر پر تشویش کا اظہار کیا گیا کہ وزیر اعظم کی ہدایت کے باوجود وفاقی حکومت نے مطبوعات کو91 کروڑ روپے کی متفقہ رقوم میں سے صرف 14کروڑ کی ادائیگی کی ہے۔ ایگزیکٹو کمیٹی نے اس بات پر زور دیا کہ ادائیگیوں کے عمل کو تیز کیا جائے تاکہ اخبارات کی مالی مشکلات کا ازالہ ہو سکے۔ ایگزیکٹو کمیٹی نے شہاب زبیری کی صدارت میں منعقدہ ایوارڈز کمیٹی کے اجلاس کی رپورٹ کو منظور کرتے ہوئے فیصلہ کیا کہ 24 ویں اے پی این ایس ایوارڈز اور سالانہ ڈنر کی تقریب اگست2019ء کے آخری ہفتے میں منعقد کی جائے گی۔ ایگزیکٹو کمیٹی نے اس با ت پر بھی تشویش کا اظہار کیا کہ خیبر پختونخواکے وزیر اطلاعات نے اخبارات پر سیلز ٹیکس اور رجسٹریشن فیس واپس لینے پر اتفاق کیا تھا لیکن اس پر تاحال عمل درآمد نہیں ہوا۔ ایگزیکٹو کمیٹی نے خبیر پختونخوا حکومت پر زور دیا ہے کہ اخبارات سے ٹیکس کی رقم کی وصولی کو روکا جائے اور رجسٹریشن فیس کے نفاذ کے فیصلہ کو فی الفور واپس لیا جائے۔ ایگزیکٹو کمیٹی نے اس بات پر بھی تشویش کا اظہار کیا کہ کچھ ایکریڈائٹڈ ایڈورٹائزنگ ایجنسیوں نے وفاقی حکومت اور صوبائی حکومتوں سے رقوم کی ادائیگیاں ہونے کے باوجود بھی ابھی تک رکن مطبوعات کے واجبات ادا نہیں کیے۔ یہ فیصلہ کیا گیا کہ پی آئی ڈی سے درخواست کی جائے کہ ایسی ایجنسیوں کو بلیک لسٹ کرکے ان کو اشتہارات جاری نہ کیے جائیں۔ مجلس عاملہ نے مزید فیصلہ کیا ہے کہ پی آئی ڈی اور صوبائی اطلاعات کے محکموں سے درخواست کی جائے کہ ایسی ایجنسیوں کے اشتہارات جاری نہ کریں جو اے پی این ایس سے نادہندگی کی بنا پر معطل ہیں۔ ایگزیکٹو کمیٹی نے خوشنود علی خان کی سربراہی میں ایک ریکوری کمیٹی بھی تشکیل دی ہے جو نادہندہ ایجنسیوں سے واجبات کی ادائیگی کے لیے مناسب اقدامات کرے گی۔ ایگزیکٹو کمیٹی نے ایسوسی ایٹ ممبر شپ کے لیے آئی ہوئی درخواستوں پر غور کیا اور روزنامہ نوائے آزاد ملتان، ماہنامہ انجینئرنگ پوسٹ لاہور اور ماہنامہ ہاسپیٹلیٹی پلس لاہور کو ایسو سی ایٹ رکنیت دینے کا فیصلہ کیا۔ ایگزیکٹو کمیٹی نے مستقل رکنیت کے لیے اپیل پر غور کرتے ہوئے روزنامہ جھوک ملتان کو مستقل رکنیت دینے کا فیصلہ کیا۔ اجلاس میں رمیزہ مجید نظامی سینئر نائب صدر، ممتاز اے طاہر نائب صدر، سرمد علی سیکرٹری جنرل، سید محمد منیر جیلانی جوائنٹ سیکرٹری، شہاب زبیری فنانس سیکرٹری، سید سجاد بخاری (روزنامہ ابتک)، محسن بلال خان (روزنامہ اوصاف)، وسیم احمد (روزنامہ عوام کوئٹہ)، عنصر محمود بھٹی (ماہنامہ سینٹر لائین)، نوید چودھری (روزنامہ سٹی42)، محترمہ فوزیہ شاہین (ماہنامہ دستک)، محمد وقارالدین (روزنامہ دنیا)، سید اکبر طاہر (روزنامہ جسارت)، جاوید مہر شمسی (روزنامہ کلیم )، محمد اسلم لغاری (روزنامہ کاوش)، سید ایاز بادشاہ (روزنامہ مشرق پشاور)، شاکرالرحمن (روزنامہ مشرق کوئٹہ )، سردار خان نیازی (ماہنامہ نیا رخ)، رخسانہ صولت سلیمی (ہفتہ روزہ نکھار )، عثمان شامی (روزنامہ پاکستان لاہور )، گوہر زاہد ملک (روزنامہ پاکستان آبزرور )، خوشنود علی خان (روزنامہ صحافت ) ، ہمایوں گلزار (روزنامہ سیادت)، عرفان اطہر (روزنامہ تجارت لاہور )، سید ہارون شاہ (روزنامہ وحدت )، جاوید احمد (روزنامہ اعتماد) اور عبداللہ داد (روزنامہ سندھ سجاگ)، مہتاب خان (روزنامہ اوصاف)، عمران اطہر (روزنامہ دی بزنس) بلال محمود (روزنامہ نوائے وقت)، طاہر مغل (روزنامہ نوائے پاک) اور رائو امجد اقبال (روزنامہ ہر لمحہ) نے شرکت کی۔