لیڈی ہیلتھ ورکرز کی تنخواہوں کی عدم ادائیگی پر وفاق اور صوبوں کو نوٹس

121

اسلام آباد (آن لائن) عدالت عظمیٰ میں لیڈی ہیلتھ ورکرز کی تنخواہوں کی عدم ادائیگی اور سروس اسٹرکچر نہ ہونے پر توہین عدالت کی درخواست پر سماعت ہوئی‘ عدالت عظمیٰ نے وفاقی اور صوبائی حکومتوں کو نوٹس جاری کر دیے ہیں۔ درخواست کی سماعت جسٹس گلزار احمد کے سربراہی میں2 رکنی بینچ نے کی۔ دوران سماعت جسٹس گلزار احمد نے سو ال اٹھایا کہ کیا لیڈی ہیلتھ ورکرز کو تنخواہیں نہیں مل رہیں؟ کیا حکومتوں نے ابھی تک سروس اسٹرکچر بھی نہیں بنایا؟ درخواست گزار بشریٰ آرائیں نے عدالت کو بتایا کہ ایک سال سے لیڈی ہیلتھ ورکرز کو تنخواہیں نہیں دی گئیں‘ عدالت نے ہر ماہ کی یکم کو تنخواہیں ادا کرنے کا حکم دے رکھا ہے‘ سروس اسٹرکچر کو عدالتی حکم کے مطابق نہیں بنایا گیا‘ عدالت عظمیٰ کے2 جنوری 2018ء کے حکم کی خلاف ورزی کی جا رہی ہے۔ عدالت نے متعلقہ فریقین کو نوٹس جاری کرتے ہوئے معاملہ کی سماعت غیر معینہ مدت تک ملتوی کر دی۔