انتخاب(سُفیان خان)

118

طاق پر حلوہ رکھا ہے
جی بہت للچارہا ہے
کیا کروں۔۔۔؟؟
دوپہر کا وقت ہے سوئے ہیں سب
میٹھی میٹھی نیند میں کھوئے ہیں سب
اک مرا دل جاگتا ہے
کیا کروں۔۔۔؟؟
کس قدر تقدیر کا کھوٹا ہوں میں
طاقچہ اونچا ہے اور چھوٹا ہوں میں
مجھ سے گڈا بھی بڑا ہے
کیا کروں۔۔۔؟؟
ساتھ اپنے لے گئے ابو چھڑی
ورنہ کتنی کام آتی اس گھڑی
وقت نکلا جارہا ہے
کیا کروں۔۔۔؟؟
nn

حصہ