صرف باتیں نہیں کرنی  

Kashmiris attend a protest after Eid-al-Adha prayers at a mosque during restrictions after the scrapping of the special constitutional status for Kashmir by the Indian government, in Srinagar, August 12, 2019. REUTERS/Danish Siddiqui

بکرے کھاگئے، گائے کھا گئے ۔اونٹ کھا گئے ۔

کلیجی گردے سری پائے ۔

باربیکیو ۔کچھ نہ چھوڑا سب ہضم کر گئے ۔

پورے ہفتے کی چھٹی کر لی ۔پکنک منالی ۔14 اگست کا جشن منا لیا ۔

میرے گھر میں میت ہوتی ہے تو میں یہ سب کچھ کرتی ‏ہوں۔ ؟؟

۵ اگست سے میرے اپنے کشمیر میں خون کی ہولی کھیلی جارہی ہے آگ اور خون کا کھیل مزید زور پکڑ گیا ہے ۔قتل وغارت گری ۔عصمت دری ۔کیا کیا گنواؤں، ہر لفظ  اس ظلم وستم کے آگے چھوٹا پڑ جاتا ہے ۔مودی کے سامنے فرعون اور ہلاکو خان شرماتے  ہیں ۔

اب تو ہوش میں آؤ میرے دیس کے لوگو۔

اب تو میرے کشمیر کو بچاؤ میرے دیس کے لوگو ۔

صرف زبانی جمع خرچ سے سلامتی کونسل میں پچاس سال بعد کشمیر کی حیثیت کو منوانے سے بات نہیں بنے گی ۔

کشمیر بنے گا پاکستان تب بہت سارے نفس بو فراز آئیں گے جس کے لئے مجھے سب سے پہلے خود اپنے اندر جھانک کر  دیکھنا ہوگا آیا میں کشمیر کے لئے مخلص ہو ں۔ ؟؟؟

اس کے ساتھ ساتھ عوام کو بھی بیدار کرنا ہوگا ،پاکستانی عوام کو ۔امت مسلمہ کو ۔

عوام اور حکمرانوں کے سوئے ہوئے ضمیر جگانے ہیں ۔

میرا کام صرف لفظوں کی جگالی تک محدود نہ ہو ۔

کشمیر کے لیے میرا دل میرا دماغ ۔میرے بچے ۔میرا مال میرا گھر سب کچھ حاضر ہو۔

کہنے کو بات بہت بڑی ہے۔

لیکن اب بات بہت آگے نکل چکی ہے تو بڑی بات ہی کرنی ہوگی ۔

تو یہ سب کچھ بھی قربان کرنا ہوگا ۔

ان کاموں کے کرنے کے لئے اللہ کی مدد بھی چاہیے اور عملی اقدام بھی ۔

ہم میں سے ہر ایک کو رات کا راہب اور دن کا مجاہد بننے کی ضرورت ہے ۔

جو جہاں ہے جس حیثیت میں ہے ۔

نکلو خواہ ہلکے ہو یا بوجھل اور جہاد کرو اللہ کی راہ میں اپنے مالوں اور جانوں سے یہ تمہارے لیے بہتر ہے اگر تم جانو ۔سورہ توبہ آیت 41

یہ طویل جنگ ہوگی ۔

اگر اسی طرح کام آگئے تو کامیاب ہونگے

اور غزوہ ہند کے شہداء میں ہمارا نام بھی شامل ہوگا ان شاءاللہ۔ ہمیں اور کیا چاہیے ایک مومن کو اللہ کی رضا اور جنت الفردوس ۔

اے اللہ سب سے پہلے مجھے عملی اقدامات اٹھانے کی توفیق عطا فرمائے آمین ثمہ آمین

حصہ

2 تبصرے

جواب چھوڑ دیں