شاہی خاندان کا ملازم بن کر بھارتی ہوٹل سے فراڈ کرنے والا جعل ساز گرفتار

238

نئی دہلی:خود کو شاہی خاندان کا ملازم بتاکر بھارتی ہوٹل کو 23 لاکھ کا چونا لگانے والا جعل ساز گرفتار ہو گیا۔

بھارتی میڈیا کے بھارت میں خود کو شاہی خاندان کا ملازم بتا کر تین مہینے تک نئی دہلی کے ایک لگژری ہوٹل میں رہنے کے بعد 23 لاکھ 46 ہزار 413 روپے کا بل ادا کیے بغیر فرار ہو جانے والے ملزم کو پولیس نے گرفتار کر لیا ہے۔

میڈیا کے مطابق پولیس کا کہنا تھا کہ ملزم محمد شریف کے خلاف پولیس اسٹیشن سروجنی نگر میں ہوٹل کے مینیجر انوپم داس گپتا کی مدعیت میں مقدمہ درج کرنے کے بعد پولیس نے ملزم کی تلاش شروع کر دی تھی بعد ازاں ملزم کو جنوبی کناڈا سے گرفتار کر لیا گیا۔

بھارتی میڈیا کے مطابق ملزم کے خلاف دفعا 419،420 اور 380 کے تحت مقدمہ درج ہے ملزم نے چند ماہ قبل خود کو ابو ظبی کی رائل فیملی کا ملازم ظاہر کرتے ہوئے نئی دہلی کے ایک لگژری ہوٹل میں کمرہ لیا اور چند ماہ تک ہوٹل میں قیام پذیر رہا۔

بھارتی میڈیا کے مطابق جعل ساز شخص کی ہوٹل میں رہائش اور دیگر اخراجات کی مد میں 23 لاکھ روپے کا بل ادا کیے بغیر رفو چکر ہوگیا تھا۔

پولیس کے مطابق جعل ساز شخص کی شناخت محمد شریف کے نام سے ہوئی ہے جس کے خلاف ہوٹل انتظامیہ نے فراڈ کا مقدمہ درج کرایا تھا، محمد شریف نے یکم اگست کو لیلا پیلس میں روم نمبر 427 لیا اور 20 نومبر کو خاموشی سے چلا گیا جبکہ ملزم نے ہوٹل سے کراکری سمیت مختلف اشیا بھی چرائیں۔

پولیس کا کہنا تھا کہ محمد شریف نے ہوٹل انتظامیہ کو بتایا کہ وہ متحدہ عرب امارات کا رہائشی ہے اور اس کا وہاں ذاتی کاروبار ہے جب کہ وہ ابو ظبی کی شاہی فیملی کا ذاتی ملازم ہے جب کہ ملزم نے اپنا یو اے ای کا رہائشی کارڈ اور دیگر دستاویزات بھی ہوٹل انتظامیہ کو دکھائیں، ملزم کو گرفتار کرنے کے بعد عدالت میں پیش کردیا گیا ہے جس کے بعد ملزم کے ریمانڈ حاصل کرتے ہوئے مزید تفتیش جاری ہے۔