زرداری بھی نیب ترامیم سے فائدہ اٹھانے والوں میں شامل، ریفرنس واپس

433
mental balance

اسلام آباد: پیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین آصف علی زرداری بھی نیب ترامیم سے فائدہ اٹھانے والوں میں شامل ہو گئے۔

میڈیا ذرائع کے مطابق احتساب عدالت نے آصف زرداری کے خلاف ٹھٹھہ واٹر سپلائی ریفرنس نیب کو واپس بھیج دیا ہے۔ عدالت کے جج رانا ناصر جاوید نے پہلے سے محفوظ شدہ فیصلہ سناتے ہوئے ریفرنس چیئرمین نیب کو واپس بھیج دیا۔

فیصلے کے مطابق ٹھٹھہ واٹر سپلائی ریفرنس نیب قوانین میں ترامیم کے بعد عدالت کے دائرہ اختیار میں نہیں آتا، لہذا اسے متعلقہ فورم کو بھیجا جائے۔

واضح رہے کہ سابق آج ہی احتساب عدالت میں آصف زرداری نے منی لانڈرنگ ریفرنس میں بھی نیب ترامیم سے فائدہ اٹھاتے ہوئے ریفرنس واپس بھیجنے کی درخواست دائر کردی ہے۔

اسلام آباد کی احتساب عدالت میں منی لانڈرنگ ریفرنس کی سماعت میں سابق صدر کے وکیل فاروق نائیک اور نیب پراسیکیوٹر پیش ہوئے۔ وکیل نے دلائل دیے کہ ترامیم کے بعد نئے نیب قانون کے تحت ریفرنس عدالت کے دائرہ اختیار میں نہیں آتا ، لہٰذا احتساب عدالت قانون کے مطابق ریفرنس واپس بھیجے۔

احتساب عدالت کے جج ناصر جاوید رانا نے دلائل سننے کے بعد فیصلہ محفوظ کر لیا۔ اور آصف زرداری، فریال تالپور و دیگر کی ایک روزہ حاضری سے استثنا کی درخواستیں منظور کرلیں۔

علاوہ ازیں احتساب عدالت اسلام آباد میں پارک لین ریفرنس کی سماعت ہوئی، جس میں جج ناصر جاوید رانا کے روبرو سابق صدر آصف زرداری کے وکیل فاروق نائیک اور نیب پراسیکیوٹر پیش ہوئے۔

دوران سماعت آصف زرداری سمیت دیگر ملزمان کی جانب سے ایک روزہ حاضری سے استثنا کی درخواستیں پیش کی گئی، جس پر عدالت نے آئندہ سماعت پر دلائل دینے کا حکم دیتے ہوئے مزید کارروائی کیے لیے سماعت 25 جنوری تک ملتوی کردی۔

عدالت نے آصف زرداری اور دیگر کی ایک روزہ حاضری سے استثنا کی درخواستیں منظور کرلیں۔