سابقہ اور موجودہ حکمرانوں نے بلوچستان سے دھوکا کیا، سراج الحق

257
All contract

پشین: امیر جماعت اسلامی سراج الحق نے کہا ہے کہ پی ڈی ایم کی 14جماعتیں 8 ماہ سے اقتدار میں ہیں، اس دوران مسائل میں کمی کے بجائے اضافہ ہوا۔ پی ٹی آئی کی سابقہ وفاقی حکومت اور موجودہ حکمران اتحاد نے بلوچستان سے دھوکا کیا۔

پشین میں شمولیتی جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ صوبہ مسائل کی دلدل میں دھنس چکا ہے۔ نوجوان حکمرانوں سے مایوس ہیں۔ حقوق بلوچستان پیکیج سے لے کر گوادر کے عوام سے کیے گئے وعدوں تک،حکمرانوں نے ہر بار عوام سے جھوٹ بولا۔ مسنگ پرسنز کا مسئلہ حل ہوا نہ سیلاب متاثرین کی سنی گئی۔ بلوچستان کو گریٹرگیم کا حصہ نہ بنایا جائے۔

امیر جماعت نے قبائلی رہنما سردار سیف اللہ ترین کو سیکڑوں ساتھیوں سمیت جماعت اسلامی میں شمولیت پر مبارک باد دی اور اس عہد کا اعادہ کیا کہ ہم سب مل کر ملک کو اسلامی فلاحی ریاست بنانے کی جدوجہد میں مزید تیزی لائیں گے۔

اس موقع پر امیر جماعت اسلامی بلوچستان مولانا عبدالحق ہاشمی، نائب امرا صوبہ ڈاکٹر عطاالرحمان، مولانا عبدالکبیر شاکر، امیر ضلع پشین ظہور احمد کاکڑ اور زمیندار ایکشن کمیٹی سید حیات اللہ آغابھی موجود تھے۔ سراج الحق کا کہنا تھا کہ ملک میں مہنگائی، بے روزگاری، غربت، جہالت اور بدامنی کے ذمہ دار حکمران اشرافیہ ہے جو جاگیرداروں، وڈیروں، ظالم سرمایہ داروں اور مافیاز کی شکل میں وسائل پر قابض ہیں۔

انہوں نے کہا کہ مسائل کا حل اسلامی انقلاب ہے، جماعت اسلامی اسی مقصد کے حصول کے لیے جدوجہد کر رہی ہے۔دین آئے گا تو اتفاق اور وحدت قائم ہو گی اور قوم کو عزت و وقار ملے گا۔ جماعت اسلامی کو ایسے نوجوانوں کی تلاش ہے جن کے دامن پر کرپشن کا دھبہ نہ ہو اور جو ملک میں اسلامی نظام کے نفاذ کے لیے ہماری جدوجہد کا حصہ بنیں۔