مستحکم عزم کی بنیاد پر دہشت گردی کو شکست دی جا سکتی ہے، رانا ثنااللہ

130
constitution

اسلام آباد:وزیر داخلہ رانا ثنااللہ خان کی زیر صدارت نیکٹا کا تیسرا بورڈ آف گورنرز اجلاس  اسلام آباد میں منعقد ہوا۔اجلاس میں نیکٹا کی متعدد انتظامی اور مالی سفارشات پیش کی گئیں۔ نیشنل کوآڈینیٹر نیکٹا، محمد طاہر رائے کی طرف سے وفاقی سطح پر نیشنل کائونٹر ٹیررزم ڈپارٹمنٹ کے قیام کی سفارش کی گئی۔

 جس کے لئے وفاقی وزیر داخلہ رانا ثنااللہ نے ایک سات رکنی کمیٹی تشکیل دینے اور مجوزہ تجویز پر جلد از جلد سفارشات مرتب کرنے کی ہدایات جاری کیں۔ وزیر داخلہ رانا ثنااللہ خان نے نیکٹا کی کارکردگی کو سراہتے   ہوئے ایف اے ٹی ایف کی گرے لسٹ سے نکلنے پر نیکٹا کی کاوشوں کی خاص طور پر تعریف کی۔

 اس کے ساتھ ہی انہوں نے نیکٹا کو موثر کردار ادا کرنے اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کی اپنے ڈیٹا پر مبنی پالیسی سازی کے ذریعے بہتر معاونت کی تلقین بھی کی۔

 بورڈ ممبران سے مخاطب ہوتے ہوئے وفاقی وزیر نے مزید کہا کہ پوری قوم اور وفاقی سطح پر مستحکم عزم کی بنیاد پر  ہی دہشتگردی کو شکست دی جا سکتی ہے۔وفاقی وزیر برائے پاور اینڈ انرجی جناب خرم دستگیر، سینیٹر ہدایت اللہ اور سینیٹر مقبول احمد کے علاوہ وفاقی سیکریٹریز داخلہ، دفاع، قانون و انصاف اور سیکریٹری خزانہ نے اجلاس میں شرکت کی۔

ان کے علاوہ ڈی جی انٹیلی جنس، ڈی جی ایف آئی اے، ڈی جی کانٹر ٹیررزم آئی ایس آئی اور ڈی جی ملٹری انٹیلیجنس، چاروں صوبوں کے ہوم سیکریٹریز اور آئی جی پیزنے بھی بطور ممبران نیکٹا بورڈ آف گورنرز، اجلاس میں شرکت کی۔