پاکستان کی چین کوسمندری خوراک کی برآمدات میں 41 فیصد اضافہ

213
exports

اسلام آ باد: رواں سال کے پہلے دس ماہ میں پاکستان کی چین کو سمندری خوراک کی برآمدات41فیصداضافہ کیساتھ166.56ملین ڈالر تک پہنچ گئیں۔

گزشتہ سال یہ118.07ملین ڈالر تھی ۔چائنہ اکنامک نیٹ کے مطابق عوامی جمہوریہ چین کے کسٹمز کی جنرل ایڈمنسٹریشن(جی اے سی سی)کے اعداد و شمار سے پتہ چلتا ہے کہ اس سال کے پہلے دس ماہ میں پاکستان کی چین کو منجمد مچھلی، کموڈٹی کوڈ (03038990) کی برآمدات 45.47ملین ڈالر سے تجاوز کر گئیں، جو گزشتہ سال کی اسی مدت کے دوران 21.80 ملین ڈالر تھیں۔ حجم کے لحاظ سے جنوری تا اکتوبر 22331.728ٹن سے زائد منجمد مچھلی چین کو برآمد کی گئی جبکہ گزشتہ سال اسی عرصے کے دوران یہ 13084.984 ٹن تھی۔ 

اعداد و شمار سے پتہ چلتا ہے کہ اس سال جنوری سے اکتوبر میں چین کو تازہ اور ٹھنڈے کیکڑوں، کموڈٹی کوڈ (03063399) کی برآمدات 22.46ملین ڈالر تک پہنچ گئیں۔ تاہم پچھلے سال اسی عرصے میں وہ 17.14 ملین ڈالر تھے، جو کہ 31 فیصد کا اضافہ ہے۔ مقدار کے لحاظ سے اس سال کے پہلے دس ماہ میں یہ3174.391ٹن تھی اور پچھلے سال اسی مدت میں یہ 2445.136 ٹن تھی جو کہ تقریبا30فیصد اضافہ ہے۔

چائنہ اکنامک نیٹ کے مطابق اس سال جنوری سے اکتوبر کے دوران، مولسک اور شیلفش، کموڈٹی کوڈ (16055900) کی چین کو برآمدات 19.77ملین ڈالر سے تجاوز کر گئیں، جبکہ گزشتہ سال کی اسی مدت کے دوران یہ صرف1.89ملین ڈالر تھیں۔