غیر ملکی فارماسوٹیکل کمپنیوں کے پاکستان میں آپریشنز بند، ادویات کی قلت

311
Operations

لاہور: معروف غیر ملکی فارماسوٹیکل کمپنیوں نے پاکستان میں آپریشنز بند کر دیے ہیں۔ مارکیٹوں میں ادویات کی قلت پیدا ہوگئی۔

تفصیلات کے مطابق معروف امریکی، جرمن اور فرانسیسی فارماسوٹیکل کمپنیز نے پاکستان میں آپریشنز ختم کردیے۔ امریکا، فرانس اورجرمنی کی کمپنیوں نے کاروبار دوست ماحول نہ ہونے کی وجہ سے پاکستان کی مارکیٹ کو خیرباد کہہ دیاہے۔

عالمی کمپنیوں کے نمائندوں کا کہنا تھا کہ کاروباردوست ماحول نہ ہونے کے باعث کام جاری رکھنا مشکل ہے۔ ایلائے للی اور فرننزیس کابی نے رواں ماہ کاروبار ختم کرنے کا اعلان کردیا۔ کمپنی کی بندش سے ایلائے للی کی معروف انسولین ”ہیوملین“ مارکیٹ میں شارٹ ہوگئی۔ امریکی کمپنی کے مطابق ادویات کی فروخت ڈسٹری بیوٹر کے ذریعے جاری رہیں گی۔

ذرائع کے مطاق کینسر، انستھزیا اور گردوں کی ادویات تیار کرنے والی جرمن کمپنی فریزنیس کابی نے بھی کاروبار ختم کردیا جبکہ فرانسیسی کمپنی سنوفی نے بھی رواں ماہ پلانٹ اور شئیرز پاکستانی کمپنی کو فروخت کردیے۔

پاکستان فارماسوٹیکل ایسوسی ایشن کا کہنا ہے خام مال اوراخراجات میں اضافے کے باعث ڈریپ کے مقررہ کردہ ریٹس پر کاروبارممکن نہیں۔ کمپنیز کی بندش کو سنجیدیگی سے لیاجائے۔ ڈریپ کے مطابق وزیراعظم پاکستان نے ادویات کی قیمتوں سے متعلق کمیٹی تشکیل دے دی ہے جو ادویات کی قیمتوں اورامپورٹ کی مشکلات بارے جلد رپورٹ پیش کرے گی۔