اعظم سواتی کے جسمانی ریمانڈ میں چار روز کی  توسیع

184

  اسلام آباد :قومی اداروں کے خلاف متنازع بیانات کے کیس میں پی ٹی آئی کے سینیٹر اعظم سواتی کے جسمانی ریمانڈ میں چار روز کی توسیع کر دی گئی ہے۔

تحریک انصاف کے رہنما اعظم سواتی کو سینیر سول جج محمد شبیر کی عدالت میں دو روزہ جسمانی ریمانڈ مکمل ہونے پر پیش کیا گیا۔ آج ہونے والی سماعت میں وفاقی تحقیقاتی ایجنسی ( ایف آئی اے ) کی جانب سے ملزم کے مزید 6 روزہ جسمانی ریمانڈ کی استدعا کی گئی۔

 ایف آئی اے کے وکیل نے کہا کہ ملزم سے ابھی موبائل اور ٹویٹ اکانٹ سے متعلق مزید تفتیش کرنی ہے، جس کیلئے مزید ریمانڈ درکار ہے۔

 سماعت کے دوران ملزم کے وکیل بابر اعوان نے معزز عدالت کے روبرو استدعا کرتے ہوئے کہا کہ ملزم کو جان کا خطرہ ہے، اس لیے پیشی سے استثنی کی اجازت دی جائے۔

سینیٹر اعظم سواتی کی جانب سے بابر اعوان نے عدالت کو بتایا کہ سیکیورٹی خدشات پر ملزم کو پیش نہیں کیا ہے۔

 اس موقع پر اعظم سواتی نے وڈیو لنک کے ذریعے حاضری لگائی گئی۔ عدالت نے پیشی سے استثنی کی درخواست منظور کرتے کیس کی سماعت تین دسمبر تک ملتوی کر دی۔