بندروں کے لیے دعوتی میلہ، کئی اقسام کے کھانے، سیاحوں کے ساتھ سیلفیاں

312

بینکاک: وسطی تھائی لینڈ میں رواں برس بھی 27 نومبر کو بندروں کے لیے شکرمیلے کا انعقاد کیا گیا۔ حکومت کا کہنا ہے کہ بندروں کی موجودگی سے سیاحت کی انڈسٹری کو فروغ مل رہا ہے۔

دن بھر جاری رہنے والے ایونٹ میں بندروں کے سامنے کئی اقسام کے پھل اور ان کے پسندیدہ کھانے رکھے گئے تھے۔ صبح کے وقت میدان میں بندروں کے مجسمے سجائے گئے اور اس کے بعد رضاکار حقیقی بندروں کے لیے کھانے پینے کا سامان لے کر آئے۔

بعد ازاں بندروں کے غول دوڑے چلے آئے۔ اس موقع پر مکاک بندر کھانے کے دوران ایک دوسرے سے الجھتے بھی رہے تاہم اس منظر کو دیکھ کر تمام سیاح بہت محظوظ ہوئے۔ یہ منفرد تقریب بنکاک سے ایک 150 کلومیٹر دور مشہور مندر کے قریب منعقد ہوئی۔

میلے میں جانوروں کے لیے وسیع رقبے پر پھل اور سبزیاں رکھی گئی تھیں۔ ہرسال اس تقریب سے سیاحت کو فروغ ہوتا ہے کیونکہ دنیا بھر سے لوگ اسے دیکھنے کےلیے آتے ہیں۔ لوپبیوری انتظامیہ کے مطابق شروع میں تقریباً 300 بندر شریک تھے جن کی تعداد بڑھ کر اب 4000 تک پہنچ چکی ہے۔

شہر کی انتظامیہ کے مطابق انسان اور بندر دونوں ایک ساتھ سکون سے رہ سکتے ہیں۔ یہاں تک کہ بندر سیاحوں کے پاس بھی خود گئے اور انہوں نے سیاحوں کے ساتھ تصاویر بھی بنوائیں۔