پاکستان ترکیہ کو قابل تجدید توانائی کیلیے مل کر کام کرنا ہوگا، وزیراعظم

179

استنبول: وزیراعظم شہبازشریف نے کہا ہے کہ پاکستان اور ترکیہ دفاعی قوت کو امن کے لیے مستحکم کررہے ہیں۔

استنبول میں پی این ایس خیبر تھری کی لانچنگ تقریب سے خطاب میں وزیراعظم کا کہنا تھا کہ اگر آپ امن سے رہنا چاہتے ہیں تو جنگ کے لیے بھی تیار رہنا ہوگا۔ مجھے اپنے دوسرے گھر کا دورہ کرنے میں بڑی خوشی ہے، آج کا دن ہمارے تاریخی تعلقات کے حوالے سے عظیم ہے۔ ترکیہ ہمیشہ مشکل وقت میں پاکستان کے ساتھ کھڑا رہا۔

وزیراعظم کا کہنا تھا کہ پاکستان اور ترکیہ ماحولیاتی آلودگی کے لیے مل کر کام کرسکتے ہیں۔ پاکستان،ترکیہ کو قابل تجدید توانائی کے حصول کے لیے مل کر کام کرنا ہوگا۔ ان کا کہنا تھا کہ دنیا بھرکی طرح پاکستان کو بھی توانائی بحران کا سامنا ہے اور پاکستان قابل تجدید اور سستی توانائی ذرائع کے لیے اقدامات کررہا ہے۔

شہبازشریف نے کہا کہ آج دنیا کو بہت سے تنازعات کا سامنا ہے، پاک، ترکیہ تعلقات وقت کیساتھ مزیدمضبوط ہوں گے۔ رجب طیب اردوان کی زیر قیادت ترکیہ ایک جدید فلاحی ریاست بن چکا ہے، ترک صدر کے ویژن کے باعث ترکیہ ماڈرن سوسائٹی میں تبدیل ہوا۔

اس موقع پر ترکیہ کے صدر رجب طیب اردوان کا کہنا تھا کہ پاکستان اور ترکیہ کے گہرے برادرانہ اور تاریخی تعلقات ہیں۔دوطرفہ دفاعی تعاون باہمی تعلقات کا بنیادی ستون ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان اور ترکیہ دہشت گردی کے خاتمے کے لیے متحد ہیں۔ دہشت گردوں کے خلاف زیرو ٹالرنس کی پالیسی پر گامزن ہیں۔