ناسا کا اورین کیپسول سے رابطہ دوبارہ قائم، 11دسمبر کو بحر الکاہل میں اترے گا

185

نیو یارک: امریکا کی نیشنل ایروناٹکس اینڈ اسپیس ایڈمنسٹریشن (ناسا)نے اعلان کیا کہ اس نے 16نومبر کو “آتیمس” مشن کے ساتھ لانچ کیے گئے اورین کیپسول کے ساتھ دوبارہ رابطہ قائم کر لیا ہے۔

ناسا نے اعلان کیا کہ ڈیپ اسپیس نیٹ ورک جو کہ خلا سے زمین تک ڈیٹا بھیجنے کے لیے استعمال کیا جاتا ہے اور اورین کیپسول کے درمیان تعمیر نو کے عمل کے دوران کیپسول سے رابطہ منقطع ہو گیا تھا۔

47 منٹ کا مواصلاتی رابطہ منقطع ہو ہوا تھا اور اس سگنل کے منقطع ہونے کی وجہ سے ہونے والے نقصان کی تحقیقات کی جائیں گی۔اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ اورین 21 نومبر کو 128 کلومیٹر کے ساتھ چاند کے مدار میں سطح کے قریب ترین مقام پر پہنچ گیا۔

اورین کیپسول تقریبا ایک ہفتے تک چاند کے گرد چکر لگائے گا، پھر زمین پر واپس جائے گا اور 11دسمبر کو بحر الکاہل میں اترے گا۔