خواب……………اقبال

825

عام حْریّت کا جو دیکھا تھا خواب اسلام نے
اے مسلماں آج تْو اْس خواب کی تعبیر دیکھ

اپنی خاکستر سمندر کو ہے سامانِ وجود
مر کے پھر ہوتا ہے پیدا یہ جہانِ پِیر، دیکھ