پنجاب: میں ائراینڈ واٹر کوالٹی مانیٹرنگ سسٹم لگانے کا فیصلہ

144

لاہور : پنجاب حکومت نے 10 اضلاع میں ائراور واٹرکوالٹی مانیٹرنگ سسٹم لگانے کا فیصلہ کر لیا۔لاہور، شیخوپورہ ، ملتان، ڈی جی خان، راولپنڈی، گوجرانوالا، وہاڑی اور دیگرشہروں میں مانیٹرنگ سسٹم نصب ہوں گے۔

وزیراعلیٰ پنجاب کی زیر صدارت اعلی سطح کا اجلاس ہوا، اجلاس کے دوران پنجاب کے 10اضلاع میں ایئر اورواٹرکوالٹی مانیٹرنگ سسٹم لگانے کا فیصلہ کیا گیا، لاہور، شیخوپورہ، ملتان،ڈی جی خان، راولپنڈی، گوجرانوالا، وہاڑی اور دیگر شہروں میں مانیٹرنگ سسٹم نصب ہوں گے۔ چودھری پرویز الہی نے کہا کہ عالمی بینک پنجاب گرین ڈویلپمنٹ پراجیکٹ کے لیے 200 ملین ڈالرکا آسان قرضہ دے گا، پنجاب میں 30مقامات پر ایئر کوالٹی مانیٹرنگ سسٹم لگائے جائیں گے، 15 مقامات پر واٹر کوالٹی مانیٹرنگ سٹیشن قائم کیے جائیں گے۔

لاہور میں 25 الیکٹرک بسوں سے ماحول دوست پائلٹ پراجیکٹ کا آغاز کیا جائے گا۔ ماحولیاتی بہتری کے لیے پلاسٹک کو کنٹرول کرنے کے لیے قانون سازی کی جائے گی، ماحولیاتی آلودگی کے خاتمے کے لیے پلاسٹک کے سنگل یوز کو یقینی بنایا جائے گا۔ وزیراعلیٰ کا کہنا تھا کہ ڈویژنز میں انرجی ایفیشنٹ بلڈنگزکے تحت سرکاری عمارتوں کی چھتوں پر سولر پینل لگائے جائیں گے۔

صوبے ب کے 6 ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر اسپتالوں کو سولر انرجی پر منتقل کیا جا چکا ہے۔پنجاب میں گرین فنانسنگ سٹریٹجی تشکیل دی جا رہی ہے، گرین فنانسنگ کے تحت 50ملین ڈالر کا انوائر منٹ انڈوومنٹ فنڈ قائم کیاجائے گا۔ اجلاس کے دوران نجی گاڑیو ں کے لیے ٹوکن ٹیکس کو موٹر وہیکل انسپکشن اور سرٹیفکیشن سے مشروط کرنے کی تجویز کا بھی جائزہ لیا گیا۔