پاکستان میں طبی سیاحت کے فروغ کے وسیع امکانات 

138
medical

اسلام آباد: پاکستان میں طبی سیاحت کے فروغ کے وسیع امکانات موجود ہیں۔

ویلتھ پاک کی رپورٹ کے مطابق پاکستان طبی سیاحت میں دیگر ممالک بالخصوص ترقی یافتہ ممالک کے مقابلے میں مختلف بیماریوں کا کم لاگت معیاری علاج فراہم کرتا ہے۔ سیاحوں کے لیے تیز رفتار ویزا پروسیسنگ، پروموشنل مہمات ، غیر ملکیوں کو مناسب سیکیورٹی اورمعیاری میڈیکیئر فراہم کرکے پاکستان کو ایک میڈیکل مرکزمیں تبدیل کرنے کی بڑی صلاحیت موجود ہے۔

پاکستان سستے اور معیاری علاج کے خواہاں غیر ملکیوں کے لیے پسندیدہ ترین ممالک میں سے ایک بن سکتا ہے جس سے طبی سیاحت کو فروغ ملے گا۔ طبی سیاحت کی عالمی قیمت 2028 تک 21 فیصد کی جامع سالانہ ترقی کی شرح سے 53.51 بلین ڈالرتک پہنچنے کا امکان ہے۔

پاکستان میں طبی سیاحت اور مہمان نوازی کے شعبے کو فروغ دینے کے بارے میں بات کرتے ہوئے پاکستان ٹورازم ڈویلپمنٹ کارپوریشن کے منیجنگ ڈائریکٹر آفتاب الرحمان نے ویلتھ پاک کو بتایا کہ میڈیکل ٹورزم میں ترقی کے امکانات ہیں کیونکہ پاکستان علاقائی اور ترقی یافتہ ممالک کے مقابلے میں مختلف بیماریوں کے لیے کم لاگت کے علاج کی پیشکش کرتا ہے اور دنیا بھر سے مریض یہاں آتے ہیں۔