ملک خطرناک بھنور میں، حکمران مفادات کی جنگ میں مصروف ہیں، حسین محنتی

148
their rights

کراچی: امیرجماعت اسلامی سندھ سابق ایم این اے محمد حسین محنتی نے کہا ہے کہ ملک میں سیاست گالم گلوچ اورتجارتی مقاصد کیلئے کی جارہی ہے،عوام کو ریلیف دینے کیلئے اقتدار میں آنے والی موجودہ حکومت نے عام آدمی کو مہنگائی کی سونامی میں غرق کردیا ہے۔

محمد حسین محنتی نے کہاکہ اے پی ڈی ایم والے امریکی اور آئی ایم ایف کی غلامی میں پی ٹی آئی سے بھی آگے نکل چکے ہیں، ملک میں سیاسی،معاشی اور تعیناتی بحران ہے جس کی وجہ سے پورا نظام جام ،عوام مشکلات سے دوچار اور ملک کی سلامتی داؤ پر لگ چکی ہے۔

انہوں نے کہاکہ حکومت اور حزب مخالف ہوش کے ناخن لیں اور ایک دوسرے کو دھمکیاں دینے کی بجائے موجودہ بحران کو مذاکرات سے حل کیا جائے جماعت اسلامی دونوں فریقوں میں صلح کرانے کیلئے تیار ہے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے مدرسہ تفہیم القرآن میں اسلامی جمعیت طلبہ سندھ کی جانب سے منعقدہ تین روزہ ”تعمیر ت کیمپ” سے خطاب کرتے ہوئے کیا، اس موقع پر صوبائی نائب امیر حافظ نصراللہ چنا،ڈپٹی جنرل سیکریٹری علامہ حزب اللہ جکھرو اور ناظم اسلامی جمعیت طلبہ سندھ مرزا نعمان بیگ نے بھی خطاب کیا۔

محمد حسین محنتی نے مزید کہا کہ طلباء موجودہ نفسا نفسی کے دور میں اسلامی جمعیت طلبہ کے پلیٹ فارم سے اعلیٰ تعلیمی اداروں میں لبرل،سیکولر تنظیموں کا مولانا مودودی کے لٹریچر کے ذریعے مقابلہ کررہے ہیں جو بہت بڑا کام ہے، لٹریچر میں سید مودودی ہمارے لئے رول ماڈل ہیں ان کی دعوت کو عام کرنے کی ضرورت ہے ،نوجوان نسل تک تحریک کی دعوت پہنچانا وقت کی اہم ترین ضرورت ہے۔

رہنما جماعت اسلامی پاکستان کا کہنا تھا کہ نوجوان مستقبل کے قائد ہیں ہمارا مستقبل آپ جوانوں کے ہاتھوں میں ہے،معاشرے کے اندر نوجوانوں کی کثیر تعداد موجود ہے جنہیں اسلامی جمعیت طلبہ کے پلیٹ فارم پر متحد کرنے کی ضرورت ہے ،جمعیت کا ہر نوجوان قائد ہے اسلئے نوجوانوں کے مسائل کو حل کرنا آپ پر فرض ہے۔

 انہوں نے مزید کہا کہ معاشرے میں بے راہ روی،فحاشی عریانی کا سیلاب ہے جس کے آگے بندھ باندھنے کی اشد ضرورت ہے نوجوانوں سب سے زیادہ مغربی تہذیب کا نشانہ ہیں شیطانی تہذیب کا کام ہی یہ ہے کہ وہ ہمارے مستقبل کے معماروں کو اپنے اصل مقاصد سے ہٹاکر بے راہ روی اور بیہودگی میں غرق کردے،تعلیمی اداروںمیں منشیات ،بیہودہ پروگرامات اسی مقصد کا حصہ ہیں اسلئے اسلامی جمعیت طلبہ کے نوجوانوں کو ہر وقت اپنے سامنے مولانامودودی کے بتائے ہوئے عظیم مقصد کو سامنے رکھتے ہوئے دین کی سربلندی اور پاکستان کو اسلامی پاکستان خوشحال پاکستان بنانے کیلئے تحریک کے ہر اول دستے کا کردار ادا کرنا چاہئے۔