اسلام امن و آشتی کا مذہب اور حقوق نسواں کا ضامن ہے، دردانہ صدیقی

134

کراچی: جماعت اسلامی پاکستان حلقہ خواتین کی سیکرٹری جنرل دردانہ صدیقی نے کہا ہے کہ اسلام امن و آشتی کا مذہب اور خواتین کے حقوق کےتحفظ کا ضامن ہے، مگر وطن عزیز پاکستان میں خواتین کی بے حرمتی اور معصوم بچیوں کے ساتھ زیادتی اور قتل کے واقعات میں جس تیزی سے اضافہ دیکھنے میں آرہا ہے، یہ حکومت، تعلیمی ماہرین، پالیسی سازوں اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کے لیے لمحہ فکر ہے۔

کراچی میں 7 سالہ بچی کے ساتھ زیادتی اور پرتشدد قتل کے واقعے پر اپنے مذمتی بیان میں انہوں نے کہا کہ ضرورت اس بات کی ہے کہ وہ سوتے بند کیے جائیں جو ایسے اخلاقی سانحات کاسبب بن رہے ہیں۔ مخلوط تعلیمی نظام، تربیت اور اخلاقیات سے عاری تعلیم، مذہب سے دوری، نفس پرستی اور میڈیا کی اخلاق سوز نشریات سمیت دیگر  کئی عوامل اخلاقی زوال کا سبب بن رہے ہیں۔ جس پر ارباب اختیار کی کوئی توجہ ہے نہ روک تھام کا کوئی مثبت لائحہ عمل۔

ان تمام عوامل کا نتیجہ یہ ہے کہ معاشرے کی ہر اکائی اپنے دائرے میں کمزور پڑ رہی ہے۔ انہوں نے توجہ دلائی کہ ان بڑھتے ہوئے تکلیف دہ سانحات کی روک تھام کے لیے حکومت کو سنجیدہ اقدامات کرنے چاہییں۔ نوجوانوں کو نظام معاشرت کے بارے شرعی احکامات سے آگاہی، اخلاقی تربیت کا موثر نظام،مخلوط تعلیمی نظام کا خاتمہ اور حقیقی مجرموں کو فوری سزائیں وقت کی اہم ضرورت ہے۔