بھارتی میڈیا عالمی جوہری ایجنسی کے ڈی جی سے منسوب بیان پر گمراہی پھیلا رہا ہے، ترجمان دفتر خارجہ

163
Foreign Office

اسلام آباد : پاکستانی علاقے پر جوہری ہتھیار لے جانے کے حامل بھارتی براہموس میزائل کی فائرنگ کے معاملہ پر ترجمان دفتر خارجہ نے کہا کہ بھارتی میڈیا کا بین الاقوامی جوہری توانائی ایجنسی کے ڈائریکٹر جنرل سے منسوب بیان پر گمراہ کن پروپیگنڈا کیا جا رہا ہے۔

ترجمان دفتر خارجہ کے مطابق بھارتی میڈیا نے بھارت کو غیر ذمے دارانہ جوہری رویہ سے بری الذمہ قرار دینے کی مکروہ کوشش کی ہے۔پوچھا گیا کہ آئی اے ای اے نے میزائل فائرنگ پر بھارتی حکومت سے معلومات مانگی تھی اور جس پر دستیاب شواہد عکاس ہیں کہ آئی اے ای اے کے ڈائریکٹر جنرل نے اس وقت نفی میں جواب دیا۔

ترجمان نے کہا کہ بھارتی میڈیا کو پتا ہونا چاہیے کہ بین الاقوامی جوہری توانائی ایجنسی کے پاس ایسے امور کا مینڈیٹ نہیں ہے۔براہموس میزائل فائرنگ علاقائی اور عالمی سلامتی کےلئے سنگین مضمرات کا حامل واقعہ تھا۔واقعہ نے بطور جوہری ریاست بھارتی طرز عمل بارے کئی سوالات کو جنم دیا۔بھارت کو جوہری کمانڈ اینڈ کنٹرول پروٹوکول کے بارے سوالات کے جواب دینے ہوں گے اور بھارتی فوج میں غنڈہ گرد عناصر کی موجودگی کے بارے میں بھی سوالات کے جوابات دینا ہوں گے۔

ترجمان کا کہنا تھا کہ بھارت کو جوہری تابکار مواد کی چوری اور غیر قانونی اسمگلنگ کے متواتر واقعات کی بھی وضاحت کرنا ہو گی۔ امید ہے کہ آئی اے ای اے کے جوہری حادثات اسگلنگ ڈیٹا بیس میں بھارتی جوہری سلامتی کے بارے میں واقعات رپورٹ ضرور ہوئے ہوں گے۔

انہوں نے کہا کہ بھارتی جوہری امور سے متعلق تمام سوالات پیچیدہ ہیں لیکن تاحال جواب طلب ہیں، عالمی برادری کے لیے بھارتی جوہری معاملات بدستور باعث تشویش ہونے چاہییں۔