مسجد نبوی واقعہ: عدالت نے ملوث افراد کی دوبارہ گرفتاری کا حکم دے دیا

450

راولپنڈی: مسجد نبوی واقعہ پر عدالت عالیہ نے ملوث افراد کی دوبارہ گرفتاری کا حکم دے دیا۔

لاہور ہائیکورٹ راولپنڈی بینچ نے مسجد نبوی میں پیش آئے واقعے کی سماعت کے دوران ریمارکس دیے کہ شہباز شریف کون ہوتے ہیں جو واقعے میں ملوث افراد کو رہا کرائیں۔

نجی ٹی وی کے مطابق پیر کے روز مسجد نبوی میں وفاقی وزرا کے ساتھ پیش آنے والے واقعے پر شیخ رشید کے خلاف اٹک میں درج مقدمے کی درخواست اخراج پر سماعت لاہور ہائیکورٹ راولپنڈی میں ہوئی،عدالت نے کیس کے تفتیشی افسر راجہ فیاض پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ مقدمے میں نامزد باقی ملزمان کہاں ہیں، ابھی تک گرفتار کیوں نہیں ہوئے؟

وکیل شیخ رشید نے کہا کہ وزیراعظم نے سعودی عرب جاکر واقعے میں ملوث افراد کو رہا کرا دیا ہے، جس پر عدالت نے کہا کہ وزیراعظم پاکستان کا اس کیس سے کیا تعلق؟ شہباز شریف کون ہوتے ہیں جو واقعے میں ملوث افراد کو رہا کرائیں۔

عدالت نے ریمارکس دیے کہ سیاستدان اپنی گندگی کو اس واقعے سے دور رکھیں، سیاستدانوں کو اپنے رویوں پر غور کرنا چاہیے، بھارتی چینلز آپ نے دیکھے ہیں، وہ کیسا گند اچھال رہے ہیں؟۔

لاہور ہائیکورٹ راولپنڈی بینچ نے تفتیشی افسر کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ آپ قرآن پڑھ لیں، جس میں واضح ہے کہ نبی کریم کی آواز سے اپنی آواز نیچی رکھو۔آپ کو 4دن کی مہلت دیتے ہیں، افسوسناک واقعے کی ویڈیو میں نظر آنے والے ملزمان کو گرفتار کریں۔لاہور ہائیکورٹ راولپنڈی بینچ کے جسٹس چودھری عبدالعزیزنے کیس کی سماعت 4 نومبر تک ملتوی کر دی۔