پنجاب حکومت کا خاتون صحافی کی بیٹی کو سرکاری ملازمت دینے کا اعلان

170

لاہور: وزیراعلیٰ پنجاب نے لانگ مارچ میں کنٹینر کے نیچے آکر جاں بحق ہونے والی خاتون رپورٹر کی بیٹی کو سرکاری ملازمت اور شوہر کو سرکاری محکمے میں فوٹوگرافر کی نوکری دینے کا اعلان کردیا۔

نجی ٹی وی کے مطابق وزیراعلیٰ پنجاب چودھری پرویز الہٰی نے چیئرمین تحریک انصاف عمران خان کے کنٹینر کے نیچے آکر زندگی کی بازی ہارنے والی خاتون رپورٹر صدف نعیم کے اہل خانہ کے ساتھ افسوس ناک واقعہ پر دلی ہمدردی اور تعزیت کی اور بیٹے و بیٹی کو دلاسا دیا اور شفقت کا اظہار کیا۔ انہوں نے کہا کہ شعبہ صحافت میں مرحومہ کی خدمات تادیر یاد رکھی جائیں گی۔

وزیراعلیٰ پنجاب کا کہنا تھا کہ مرحومہ کی ناگہانی وفات پر شدید رنج وغم ہوا اور غم کی اس گھڑی میں اہل خانہ کے دکھ میں برابر کے شریک ہیں۔ صدف نعیم کی بیٹی سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ہم آپ کی ہر طرح سے دیکھ بھال جاری رکھیں گے۔انہوں نے بیٹی نمرہ نعیم کو سرکاری ملازمت اور صدف نعیم مرحومہ کے شوہر کو سرکاری محکمے میں فوٹو گرافر کی ملازمت دینے کا اعلان کیا۔

اس موقع پر وزیراعلیٰ پرویز الٰہی کی خاتون صحافی صدف نعیم مرحومہ کی بیٹی نمرہ، بیٹے اذان، چچا نوید بھٹی اور قریبی سہیلی مروہ انصر سے ملاقات اور بیٹی کو 50 لاکھ روپے مالی امداد کا چیک دیا۔