فیصلہ جانبدار ہے، مافیا فیڈرل پارٹی ختم کرنے کی کوشش کررہا ہےعمران خان

206

اسلام آباد: چیئرمین پاکستان تحریک انصاف عمران خان نے توشہ خانہ ریفرنس کیس میں الیکشن کمیشن کے فیصلے کو جانب دارانہ قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ مافیا فیڈرل پارٹی کو ختم کرنے کی کوشش کررہا ہے۔

نجی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق سابق وزیراعظم نے بنی گالہ میں پارٹی رہنماؤں کے اجلاس کے بعد اپنے ویڈیو پیغام میں کہا کہ ہم نے توشہ خانہ سے جو چیزیں آدھی قیمت پر خریدیں اس کا سارا ریکارڈ متعلقہ محکمے میں موجود ہے جبکہ توشہ خانہ کا قانون نواز شریف اور آصف علی زرداری نے توڑا تھا انہوں نے گاڑیاں نکالی تھیں  اور قانون توڑا، ان کے خلاف کوئی کیس سنا نہیں گیا اور 10 سال سے کیس زیر سماعت ہیں جبکہ میرے وکیل نے بتایا کہ توشہ خانے میں تمام ریکارڈ کی موجودگی کے باوجود میرے خلاف فیصلہ دیا۔

عمران خان نے چیئرمین الیکشن کمیشن کے حوالے سے کہا کہ یہ وہ شخص ہے جو گزشتہ ڈھائی برس سے ہمارے خلاف فیصلے دے رہا ہے، اس کے فیصلے غیر جانبدار نہیں تھے، صاف و شفاف انتخابات کے لیے ای وی ایم کی کوشش کرتے رہے لیکن مسلم لیگ (ن) اور پیپلز پارٹی کے ساتھ ملکر وہ نہیں ہونے دیا۔ پہلے بیرونی سازش کے لیے ہماری حکومت گرائی اور کروڑوں  روپے خرچ کرکے اراکین اسمبلی خریدے اور انہیں لوٹا بنایا، اس کے بعد پرامن مظاہرہ کیا لیکن کارکنوں پر بدترین تشدد کیا اور میرے خلاف اب مقدمے کردیے گئے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ مافیا فیڈرل پارٹی کو ختم کرنے کی کوشش کررہا ہے۔ میرا مقابلہ اس شخص سے کیا جارہا ہے جو قطری خط کے ذریعے جھوٹ بولتا رہا اور اربوں روپے کی کرپشن کی۔ انہوں نے کارکنوں کو الیکشن کمیشن کے فیصلے کے خلاف احتجاج کو ختم کرنے کی ہدایت دی اور کہا کہ سب لانگ مارچ کی تیاری کریں۔ یہ تاریخ کا سب سے بڑا لانگ مارچ ہوگا جو اپنے مقصد کے حصول تک جاری رہے گا۔