سائفر آڈیو لیکس:کابینہ نے عمران خان اور ساتھیوں کی قانونی کارروائی کی منظوری دے دی

216

اسلام آبادوفاقی کابینہ نے سائفر کی آڈیو لیکس کے معاملے پر سابق وزیراعظم عمران خان، اسد عمر، شاہ محمود قریشی اور سابق سیکریٹری ٹو پرائم منسٹر اعظم خان کے خلاف قانونی کارروائی کی باضابطہ منظوری دے دی۔

اس حوالے سے جاری بیان میں بتایا گیا کہ کابینہ نے ‘ڈپلومیٹک سائفر’ سے متعلق آڈیو لیک پر وفاقی تحقیقاتی ادارے (ایف آئی اے) کے ذریعے تحقیقات اور قانونی کارروائی کی منظوری دی۔

خیال رہے کہ کابینہ نے 30 ستمبر کو عمران خان کی سفارتی سائفر سے متعلق آڈیو لیک پر کابینہ کمیٹی تشکیل دی تھی جس نے یکم اکتوبر کو منعقدہ اجلاس میں قانونی کارروائی کی سفارش کی۔

کابینہ کمیٹی نے اپنی سفارشات میں کہا ہے کہ یہ قومی سلامتی کا معاملہ ہے جس کے قومی مفادات پر سنگین مضر اثرات ہیں، قانونی کارروائی لازم ہے، یف آئی اے سینئر حکام پر مشتمل کمیٹی تشکیل دے۔

سفارشات میں کہا گیا ہے کہ ایف آئی اے انٹیلی جنس اداروں سے بھی افسران اور اہل کاروں کو ٹیم میں شامل کر سکتی ہے، ایف آئی اے کی ٹیم جرم کرنے والوں کے خلاف قانون کے مطابق کارروائی کرے۔

یاد رہے کہ ڈپلومیٹک سائفر سے متعلق عمران خان کی پہلی آڈیو 28 ستمبر جبکہ دوسری آڈیو 30 ستمبر کو منظر عام پر آئی تھی۔

اس سے چند روز قبل وزیراعظم ہاؤس میں وزیراعظم شہباز شریف اور مسلم لیگ (ن) کے دیگر رہنماؤں کی گفتگو کی بھی آڈیو لیکس منظر عام پر آئی تھیں جس پر وزیراعظم کے دفتر اور رہائش گاہ کی سیکیورٹی کے حوالے سے تشویش کی لہر دوڑ گئی تھی۔