بجلی چوری کے مقدمے میں 9 سالہ طالبعلم کی عبوری ضمانت منظور

296
Interim bail

لاہور: لاہور کی مقامی عدالت نے بجلی چوری کے مقدمہ میں ملوث تیسری جماعت کے طالبِ علم کی عبوری ضمانت منظور کر لی۔

تفصیلات کے مطابق سیشن عدالت لاہور میں بجلی چوری کے مقدمے میں ملوث تیسری جماعت کے طالبعلم کی عبوری ضمانت  سے متعلق درخواست پر سماعت ہوئی۔ عدالت نے ملزم بچے کو 50 ہزار کے ضمانتی مچلکے جمع کروانے کا حکم دے دیا۔ لاہور کی سیشن عدالت نے تھانہ مصری شاہ کے تفتیشی افسر کو آئندہ سماعت پر ریکارڈ سمیت طلب بھی کر لیا۔

ایڈیشنل سیشن جج اخلاق احمد نے 9 سالہ فلک شیر کی عبوری ضمانت کی درخواست پر سماعت کی۔ عدالت میں بچے کو ارشد علی جنجوعہ ایڈووکیٹ نے ضمانت کیلئے پیش کیا۔وکیل درخواست گزار نے موقف پیش کیا کہ بچے پرالزام لگایا گیا ہے کہ اس نے بجلی چوری کرنے کے لیے کھمبے پر تار لگا رکھی تھی۔

درخواست گزار کے وکیل نے یہ موقف بھی اپنایا کہ پولیس نے مقدمہ درج کیا اور درخواست گزار بچے کو بھی گرفتار کرنے کی کوشش کی۔ عدالت سے استدعا ہے کہ بے بنیاد مقدمہ میں طالب علم کو گرفتار کیے جانے کا خدشہ ہے، عبوری ضمانت منظور کی جائے۔