خزانہ مفرور کے حوالے کرنا بلی کو دودھ کی رکھوالی پر بٹھانا ہے، عمران خان

227

پشاور: چیئرمین پاکستان تحریک انصاف عمران خان نے کہا ہے کہ یہ ہماری بدقسمتی ہے کہ نہ ہی نظام انصاف نے اسحاق ڈارکا راستہ روکا اور نہ ہی وہ روک سکے جو ملک کے محافظ بنتے ہیں۔

نجی ٹی وی کے مطابق وزیر اعلیٰ ہاؤس پشاور میں علما و مشائخ کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے سابق وزیراعظم کا مزید کہنا تھا کہ پاکستان کا خزانہ ایک ایسے شخص کے حوالے کردیا گیا ہے، جو مفرور تھا، یعنی بلی کو دودھ کی رکھوالی پر بٹھا دیا گیا ہے۔ عمران خان نے کہا کہ نظام انصاف اور ملک کے محافظ تو اسحاق ڈار کو نہ روک سکے مگر آپ کا بھائی عمران خان اس کا راستہ روکے گا۔

عمران خان نے خطاب میں کہا کہ مجھے ہٹانے میں بیرونی طاقتیں ملوث تھیں۔ آصف زرداری اور  شریف خاندان کے اربوں روپے ملک سے باہر رکھے ہیں۔ ان چوروں کی حکومت نے گزشتہ پانچ ماہ کے دوران مہنگائی کم کرنے کا دعویٰ کیا تھا، لیکن آج پاکستان مہنگائی کے معاملے میں پچاس سال کی بلند ترین سطح پر ہے۔ انہوں نے کہا کہ فضل الرحمٰن اسلام کو بیچتا ہے۔ کرسی کے بدلے ان سے اپنی مرضی کا فتویٰ لیا جا سکتا ہے۔

دریں اثنا عمران خان نے تاجرکنونشن سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ چوروں کوبیرونی سازش کے ذریعے ہم پر مسلط کیاگیا۔50 سالہ مہنگائی کے ریکارڈ ٹوٹ گئے، جوملک 17 سال بعد سب سے تیزی سے ترقی کررہاتھاوہ دیوالیہ پن کے قریب پہنچ گیا ہے۔ 2 مافیاخاندانوں نے پاکستان کو تباہ کردیا ہے۔ ہم نے تیل عالمی منڈی میں 115ڈالر ہونے کے باوجود سستابیچا، لیکن آج 90 ڈالر ہے پھر بھی 250 روپے لیٹرہے۔

عمران خان نے کہا کہ پام آئل عالمی منڈی میں 1700 سے 1000 ڈالر پرہے لیکن ملک میں مہنگا بک رہاہے، آٹااور چاول اتنے مہنگے ہوگئے ہیں تولوگ کیسے گزاراکریں۔تنخواہ دار طبقے کے لیے قیامت آچکی ہے۔موبائل فون کی 50 فیصد فیکٹریاں بندہوچکی ہیں یہی حالت گاڑیوں کی فیکٹریوں کی بھی ہے۔