طالبان رہنما بشیر نور زئی امریکی قید سے رہا، بدلے میں امریکی انجینئر رہا

136

کابل:امریکی جیل میں قید سینئر طالبان رہنما حاجی بشیر نور زئی کو رہا کر دیا گیا ہے اور اس کے بدلے میں  افعان جیل میں  قید امریکی انجینئر  مارک فریرچس کو رہا کیا گیا ہے۔

 غیر ملکی میڈیا رپورٹ کے مطابق امریکی جیل سے رہائی کے بعد سینئر طالبان رہنما حاجی بشیر نور زئی  افغانستان کے دارلحکومت کابل پہنچ گئے ہے۔

افغان وزیرِ خارجہ کا اس حوالے سے کہنا ہے کہ طالبان رہنما کی رہائی کے بدلے میں امریکی انجینئر مارک فریرچس کو رہا کر دیا گیا ہے۔

قطر میں موجود طالبان کے ترجمان محمد نعیم نے اس حوالے سے ایک بیان جاری کیا ہے۔اپنے بیان میں محمد نعیم نے تصدیق کی ہے کہ حاجی بشیر نور زئی کو رہا کر دیا گیا ہے اور وہ  پیر کو کابل پہنچ گئے ہے ۔ 

افغان میڈیا کے مطابق سینئر طالبان رہنما بشیر نور زئی امریکا کی جیل میں عمر قید کی سزا کاٹ رہے تھے تاہم وہ گوانتا نامو بے جیل میں قید نہیں تھے۔

افغان میڈیا نے بتایا ہے کہ طالبان رہنما بشیر نور زئی کو  کابل ایئر پورٹ پر افغان حکومت کے حوالے کیا گیا ہے۔ یاد رہے کہ بشیر نور زئی ہیروئن کی اسمگلنگ کے الزام میں گرفتار ہوئے تھے غیر ملکی میڈیا کے مطابق بشیر نور زئی ہیروئن کی اسمگلنگ کے الزام میں 2005 میں امریکا میں گرفتار ہوئے تھے۔